صرف اقلیتوں کا دن منانے سے کام نہیں ہوگا ، اس کے لئے متعدد پالیسیوں اور قوانین ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات اگست

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 11/08/2016 - 22:48:23 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 22:24:14 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 22:22:00 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 21:35:17 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 21:31:28 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 21:17:58 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 20:56:58 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 20:56:57 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 20:55:48 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 20:53:03 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 19:14:01
- مزید خبریں

اسلام آباد

صرف اقلیتوں کا دن منانے سے کام نہیں ہوگا ، اس کے لئے متعدد پالیسیوں اور قوانین پر نظرثانی کرنا پڑے گی

شہید بھٹو فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام سیمینار سے مقررین کا خطاب

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔11 اگست ۔2016ء)شہید بھٹو فاؤنڈیشن کی جانب سے جمعرات کو اقلیتوں کا قومی دن منایا گیا اور اس سلسلے میں اسلام آباد میں ایک مقامی ہوٹل میں ایک سیمینار منعقد کیا جس کی صدارت بزرگ سیاستدان بیرسٹر مسعود کوثر نے کی۔ سیمینار کا موضوع اقلیتوں کے لئے کم ہوتے ہوئے مواقع تھا۔ اس سیمینار میں بڑی تعداد نے سیاسی اور سول سوسائٹی کے کارکنوں نے شرکت کی۔

نظامت کے فرائض شہید بھٹو فاؤنڈیشن کے بورڈ کے رکن آصف خان نے ادا کئے۔ انہوں نے بتایا کہ پیپلزپارٹی کی حکومت نے 2009 میں ۱۱ اگست کو ہر سال اقلیت کا دن منانے کا اعلان کیا تھا۔ شہید بھٹو فاؤنڈیشن کے چیف ایگزیکٹو افیسر سکندر علی ھلیو نے سیمینار کے شرکاء کو خوش آمدید کہا اور بتایا کہ فاؤنڈیشن پالیسی امور پر قومی سطح پر سیمینا اور ورکشاپ منعقد کرائے گی۔

کرسچن اسٹڈی سنٹر کی ایگزیکٹو ڈائریکٹر جینیفر جگجیون نے اقلیتوں کے لئے کم ہوتے ہوئے مواقع کو اجاگر کیا۔ انہوں نے کہا کہ صرف یہ دن منانے سے کام نہیں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

11/08/2016 - 22:24:14 :وقت اشاعت