جرمنی کا پاکستان میں غذائی تحفظ کیلئے عالمی ادارہ خوراک کو 10 لاکھ یورو کی امداد ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات اگست

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 11/08/2016 - 21:52:35 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 21:52:34 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 21:44:31 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 21:31:28 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 21:31:28 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 21:17:58 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 21:17:58 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 21:16:51 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 21:16:51 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 21:14:24 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 21:13:22
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

جرمنی کا پاکستان میں غذائی تحفظ کیلئے عالمی ادارہ خوراک کو 10 لاکھ یورو کی امداد کا اعلان

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔11 اگست ۔2016ء ) حکومت جرمنی نے پاکستان میں پائیدار غذائی تحفظ اور لوگوں کی استعداد کار کیلئے اقوام متحدہ کے ادارہ برائے خوراک (ڈبلیو ایف پی) کیلئے 10 لاکھ یورو امداد کی تصدیق کی ہے۔ عالمی ادارہ خوراک (ڈبلیو ایف پی) عارضی طور پر بے گھر افراد کی غذائی تحفظ کے مسائل، اپنے علاقوں کو وآپسی و تعمیر و ترقی کی حکومتی کوششوں کی حکمت عملی کی تکمیل کر رہا ہے۔

عالمی ادارہ خوراک کی غذائی امداد غیر مشروط طور پر ان افراد کی بنیادی خوراک کی ضرورتوں کو پورا کرنے کیلئے ہے جو نقل مکانی پر مجبور ہیں یا پھر بدامنی کی وجہ سے چھوڑے گئے علاقوں کو واپس لوٹ رہے ہیں۔ یہ پروگرام بنیادی طور پر زندگیاں بچانے اور بھوک سے بچنے کے مقصد کے تحت ترتیب دیا گیا ہے۔حکومت جرمنی کی جانب سے عالمی ادارہ خوراک کو دی جانے والی یہ امداد ملک کے شمال مغرب میں بے گھر اور نقل مکانی کر کے اپنے علاقوں کو لوٹنے والے خاندانوں کو بلاتعطل غذائی امداد جاری رکھنے میں نہ مدد فراہم کرے گی بلکہ لوگوں کے بہتر معیار زندگی اور تعمیر نو میں ان کی معاون ثابت ہو گی۔

پاکستان میں تعینات جرمنی کی سفیر اینا لیپل نے ایک بیان میں کہا کہ جرمنی کی حکومت فاٹا کے لوگوں کی وآپسی و بحالی کی حمایت میں مصروف عمل ہے۔ جب نقل مکانی کر کے آنے والے خاندان اپنے علاقوں کو لوٹ جائیں گے تو ان کی بنیادی ضروریات کی فراہمی حکومت جرمنی کی ترجیح ہو گی اور حکومت جرمنی عالمی ادارہ

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

11/08/2016 - 21:17:58 :وقت اشاعت