پیشہ ورانہ،تکنیکی تربیت سماجی و معاشی ترقی کا گیٹ وے ثابت ہوسکتا ہے، ذوالفقار ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات اگست

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 11/08/2016 - 19:11:38 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 19:11:38 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 19:10:24 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 19:10:24 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 19:05:42 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 19:05:42 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 19:05:42 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 19:04:38 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 19:03:46 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 19:03:46 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 19:03:46
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

پیشہ ورانہ،تکنیکی تربیت سماجی و معاشی ترقی کا گیٹ وے ثابت ہوسکتا ہے، ذوالفقار چیمہ

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔11 اگست ۔2016ء)نیشنل ووکیشنل اینڈ ٹیکنیکل ٹریننگ کمیشن ( این وی ٹی ٹی سی) کے ایگزیکٹیو ڈائریکٹر ذوالفقار چیمہ نے کہاہے کہ پیشہ وارانہ اور تکنیکی تربیت کی اہمیت کو نظر انداز نہیں کیاجاسکتا جو پاکستان میں سماجی و معاشی ترقی میں گیٹ وے کا کردار ادا کرسکتے ہیں۔غربت،بیروزگاری، جرائم کے بڑھتے واقعات اور دہشت گردی کے خاتمے سمیت کئی معاشی چیلنجز سے نمٹنے کا یہ واحد راستہ ہے۔

این وی ٹی ٹی سی نے زیادہ سے زیادہ نوجوانوں کو پیشہ وارانہ اور تکنیکی تربیت فراہم کرنے پر توجہ مرکوز رکھی ہوئی ہے تاکہ وہ جرائم اور دہشت گردی کی جانب راغب نہ ہوں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری ( کے سی سی آئی ) کے دورے کے موقع پر کیا۔ اس موقع پر کے سی سی آئی کے صدر یونس محمد بشیر،سینئر نائب صدر ضیاء احمد خان، نائب صدر محمد نعیم شریف اور منیجنگ کمیٹی کے اراکین بھی موجود تھے۔

ذوالفقار چیمہ نے کہاکہ پاکستان کی مجموعی آبادی میں سے 60فیصد نوجوانوں پر مشتمل ہے لیکن یہ امر باعث تشویش ہے کہ بے روزگاری میں اضافے کی وجہ سے ہمارے نوجوان ذہنی دباؤ، مایوسی اور نا امیدی کا شکار ہیں تاہم ان مایوس اور ناامید نوجوان کو پیشہ ورانہ اور تکنیکی تربیت فراہم کر کے ایک شاندار مستقبل کی طرف راغب کیاجاسکتا ہے اس کے علاوہ عوام بالخصوص والدین میں اس حوالے سے آگہی بیدار کرنے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہاکہ اگر نوجوانوں کی صلاحیت میں اضافہ کیا جائے تو انہیں یقین ہے کہ پاکستانی نوجوان ملک کا قیمتی وسائل ثابت ہوسکتے ہیں۔انہوں نے مزید کہاکہ آدھے سے زیادہ صدی ضائع ہوکردی گئی اور پیشہ ورانہ اور تکنیکی تربیت پر کوئی توجہ نہیں دی گئی لیکن اب این وی ٹی ٹی سی نے مختلف اسکل ڈیولپنٹ اور تکنیکی تربیتی منصوبے شروع کئے ہیں۔اس کے علاوہ اقتصادی ترقی کے اس اہم پہلو کو مد نظر رکھتے ہوئے عالمی شراکت داروں کے ساتھ باہمی مفاہمت کی یادداشتوں پر دستخط بھی کیے ہیں۔

انہوں نے کہاکہ ایک ہزار سے زائد تربیتی پروگرامز منعقد کیے گئے اور اب تک 25 ادارے این وی ٹی ٹی سی سے منسلک ہو چکے ہیں جبکہ این وی ٹی ٹی سی سے تربیت حاصل کرنے کے خواہش مند طلباکی تعداد25 ہزار سے بڑھا کر50ہزار تک کر دی گئی ہے۔انہوں نے مزید کہاکہ دنیا بھر کے ترقی یافتہ ممالک نے نوجوانوں کو پیشہ ورانہ اور تکنیکی تربیت فراہم کرنے پر خصوصی توجہ دی ہے یہی بنیادی وجہ ہے کہ یہ ممالک دنیا میں سب سے آگے ہیں ۔

انہوں نے این وی ٹی ٹی سی اور صنعتوں کے درمیان دوری کا اعتراف کیا جو کئی مسائل کا باعث بنی لیکن اب این وی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

11/08/2016 - 19:05:42 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان