پنجاب حکومت کا آرمی اور سر کاری افسران کو اسلحہ لائسنس فری دینے کا فیصلہ
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات اگست

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:37:16 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:36:52 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:36:52 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:31:13 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:31:13 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:26:20 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:25:09 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:24:59 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:24:59 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:24:59 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:24:14
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

پنجاب حکومت کا آرمی اور سر کاری افسران کو اسلحہ لائسنس فری دینے کا فیصلہ

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔11 اگست ۔2016ء) پنجاب حکومت کا صوبے میں آرمی افسران اور حکومتی سر کاری افسران کو ایک ایک اسلحہ لائسنس فری دینے کا فیصلہ جبکہ اسلحہ لائسنسوں کو کمپیوٹزاڈ کر نے کے منصوبے میں25اکتوبر تک توسیع کر دی گئی ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق پنجاب میں اب تک6لاکھ35ہزار سے زائد لائسنس کمپیوٹرائزڈ ہو چکے ہیں جبکہ باقی اسلحہ لائسنسوں کو کمپیوٹرئزاڈ کر نے کی مقررہ مدت میں رواں سال25اکتوبر تک توسیع کر دی گئی اور کمپیوٹرائزاڈ نہ ہونیوالے اسلحہ لائسنس منسوخ کر دےئے جائیں گے جبکہ دوسری طرف پنجاب حکومت کو صوبے میں آرمی افسران اور حکومتی سر کاری افسران کو ایک ایک اسلحہ لائسنس فری دینے کا فیصلہ کر لیا ہے ۔
11/08/2016 - 16:26:20 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان