سانحہ کوئٹہ کے بعد ایک اور دھماکہ انٹیلی جنس اداروں کی ناکامی ہے، اعتزاز احسن
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات اگست

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:31:13 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:26:20 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:25:09 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:24:59 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:24:59 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:24:59 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:24:14 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:24:14 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:24:14 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:15:01 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 16:08:48
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کوئٹہ

کوئٹہ شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 21/01/2017 - 00:00:15 وقت اشاعت: 21/01/2017 - 00:00:16 وقت اشاعت: 20/01/2017 - 16:30:47 وقت اشاعت: 20/01/2017 - 16:30:57 وقت اشاعت: 20/01/2017 - 16:54:19 وقت اشاعت: 20/01/2017 - 17:17:03 کوئٹہ کی مزید خبریں

سانحہ کوئٹہ کے بعد ایک اور دھماکہ انٹیلی جنس اداروں کی ناکامی ہے، اعتزاز احسن

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔11 اگست ۔2016ء) سینیٹ میں قائد حزب اختلاف سینیٹر اعتزاز احسن اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف خورشید شاہ نے کہا ہے کہ نیشنل ایکشن پلان کے 20نکات تھے، سانحہ کوئٹہ کے بعد ایک اور دھماکہ انٹیلی جنس اداروں کی ناکامی ہے،ایجنسیوں کی کارکردگی بہتر بنانے اور ایجنسیوں کے آپس میں رابطے مربوط بنانے کی ذمہ داری وزرات داخلہ کی ہے،نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد میں وزرات داخلہ مکمل طور پر ناکام ہوگئی جس کی ہم سختی سے مذمت کرتے ہیں، نیشنل ایکشن پلان مکمل طور پر ناکام ہوگیا ہے،پلان پر عمل کیا جائے تو یہ حادثات و واقعات رک سکتے ہیں،وزرات داخلہ سوچے وہ ان واقعات پر شرمسار ہے یا نہیں۔

وہ جمعرات کو سانحہ کوئٹہ پرہسپتال کے دورے کے بعد میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے،میڈیا گفتگو میں اعتزاز احسن نے کہا کہ نیشنل ایکشن پلان کے 20نکات تھے مگر نیشنل ایکشن پلان پر کوئی عملدرآمد نہیں ہوا،آج پھر کوئٹہ میں دھماکہ ہوگیا جو ہماری سیکیورٹی ایجنسیز کی بہت بڑی ناکامی ہے۔انہوں نے کہا کہ وزرات داخلہ نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کرانے میں ناکام رہی ہے،ایجنسیوں کی کارکردگی بہتر بنانے اور تمام انٹیلی جنس ایجنسیوں کے آپس میں رابطے مربوط بنانے میں وزرات داخلہ ناکام رہی ہے جس کی وجہ سے آئے روز دھماکے ہورہے ہیں اور قیمتی جانوں کا ضیاع ہورہاہے۔

سینیٹر اعتزاز احسن نے کہا کہ زخمیوں کے علاج کی ذمہ داری سندھ حکومت نے لی ،شہیدوں کے بچوں کی تعلیم کیلئے بھی ٹرسٹ بنانے کی تجویز دے رہے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

11/08/2016 - 16:24:59 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان