ہندوستان، گائے ذبح کرنے پر ہندو آپے سے باہر
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات اگست

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 11/08/2016 - 14:07:54 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 14:07:54 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 14:06:44 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 13:50:50 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 13:43:57 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 13:43:57 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 13:41:49 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 13:41:49 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 13:40:39 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 13:40:38 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 13:38:22
پچھلی خبریں - مزید خبریں

ہندوستان، گائے ذبح کرنے پر ہندو آپے سے باہر

مشتعل مظاہرین نے ہندووٴں کی نچلی ذات 'دلت' سے تعلق رکھنے والے دو کزنز کو بدترین تشدد کا نشانہ بنا دیا

حیدر آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔11 اگست۔2016ء) ہندوستان کے جنوبی علاقے میں مبینہ طور پر گائے کاٹنے کے الزام میں مشتعل مظاہرین نے ہندووٴں کی نچلی ذات 'دلت' سے تعلق رکھنے والے دو کزنز کو بدترین تشدد کا نشانہ بنا دیا۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ریاست اندھرا پردیش کے مقامی ڈپٹی سپریٹنڈنٹ آف پولیس (ڈی ایس پی) لنکا انکائیہ کا کہنا تھا کہ تقریبا 50 افراد پر مشتمل مظاہرین نے ہندووٴں کی نچلی ذات دلت سے تعلق رکھنے والے موکاتی ایلیشا اور موکاتی وینکاشور راوٴ کو ایک درخت کے ساتھ باندھ کر تشدد کا نشانہ بنایا، جن پر الزام ہے کہ وہ آندھرا پردیش کے ایک گاوٴں میں ایک گائے کی کھال اتار رہے تھے۔

پولیس عہدیدار نے بتایا کہ 'جس وقت گاوٴں والوں نے دونوں افراد کو ایک گائے کی کھال اتارتے ہوئے دیکھا تو انھوں نے فرض کرلیا کہ انھوں نے ایک زندہ جانور کو کاٹا ہے'۔انھوں نے واقعے میں ملوث 7 افراد کی گرفتاری کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ 'اس موقع پر گاوٴں والے اشتعال میں آگئے اور دونوں کو پکڑ کر تشدد کا نشانہ بنایا'۔ خیال رہے کہ گائے کو ہندو مذہب میں مقدس مقام حاصل ہے اور ہندوستان میں ان کو ہلاک کرنے پر پابندی عائد ہے تاہم دونوں افراد کا کہنا تھا کہ وہ جس گائے کی کھال اتار رہے تھے وہ بجلی کے جھٹکے سے ہلاک ہوئی تھی۔

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

11/08/2016 - 13:43:57 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان