عسکری قیادت نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد میں حکومت کی عدم دلچسپی پر گہری برہمی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات اگست

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 11/08/2016 - 10:11:06 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 10:11:06 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 10:11:05 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 10:00:59 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 10:00:58 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 10:00:58 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 09:58:38 وقت اشاعت: 11/08/2016 - 09:48:20
پچھلی خبریں -

اسلام آباد

عسکری قیادت نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد میں حکومت کی عدم دلچسپی پر گہری برہمی کا اظہار - صوبائی ایپکس کمیٹیوں کے الگ الگ اجلاس بلانے کی بجائے مشترکہ اجلاس بلاکر ایک مشترکہ پلان تیار کیا جائے اور حکومت اس پر عمل درآمد کو یقینی بنائے- حکومتی اتحادیوں کی جانب سے ملک کے حساس اداروں پر تنقید اور الزام تراشیوں پر بھی عسکری قیادت کی جانب سے غصے کا اظہار کیا گیا - دہشت گردی اور کرپشن کے خاتمے کے ایجنڈے سے پیچھے نہیں ہٹیں گے اور ہرصورت ملک کو دہشت گردی اور کرپشن سے پاک کیا جائے گا -عسکری قیادت‘

نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد کے سلسلہ میں آج دوبارہ اجلاس ہوگا‘صوبائی ایپکس کمیٹیوں کو بھی آج ہونیوالے اجلاس میں طلب کیا گیا ہے‘عسکری قیادت کی جانب سے شدید ردعمل پر حکومتی حلقوں میں پریشانی پائی جارہی ہے -ذرائع

اسلام آباد(اردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین-میاں محمد ندیم سے۔11 اگست۔2016ء)عسکری قیادت نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد میں حکومت کی عدم دلچسپی پر گہری برہمی کا اظہار کیا ہے اور کہا کہ صوبائی ایپکس کمیٹیوں کے الگ الگ اجلاس بلانے کی بجائے مشترکہ اجلاس بلاکر ایک مشترکہ پلان تیار کیا جائے اور حکومت اس پر عمل درآمد کو یقینی بنائے-معتبر ذرائع کے مطابق وزیراعظم کی زیرصدارت گزشتہ روزنیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد کا جائزہ لینے کے لیے ہونے والے اجلاس میں عسکری قیادت کی جانب سے حکومتی کی غیرسنجیدگی پر گہری تشویش کا اظہار کیا گیا اور وزیراعظم سے سوال کیا گیا کہ اگر حکومت نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد میں سنجیدہ نہیں تو عسکری قیادت کو اجلاس میں کیوں بلایا گیا ہے-اجلاس میں حکومتی اتحادیوں کی جانب سے ملک کے حساس اداروں پر تنقید اور الزام تراشیوں پر بھی عسکری قیادت کی جانب سے غصے کا اظہار کیا گیا -عسکری قیادت نے واضح کیا کہ وہ دہشت گردی اور کرپشن کے خاتمے کے ایجنڈے سے پیچھے نہیں ہٹیں گے اور ہرصورت ملک کو دہشت گردی اور کرپشن سے پاک کیا جائے گا -عسکری قیادت نے وزیراعظم پر زور دیا کہ معاملے کو جلد نمٹانے کے لیے نیشنل ایکشن پلان پر اجلاس کو جاری رکھا جائے اور صوبائی ایپکس کمیٹیوں کو بھی آج جمعرات کو ہونیوالے اجلاس میں طلب کیا گیا ہے تاکہ معاملے کو اجلاسوں سے نکال کر اسے عملی شکل دی جائے-ذرائع نے بتایا ہے کہ عسکری قیادت کی جانب سے شدید ردعمل پر حکومتی حلقوں میں پریشانی پائی جارہی ہے عسکری حلقوں کا کہنا ہے کہ سول حکومت

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

11/08/2016 - 10:00:58 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان