کوئٹہ دھماکے کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے ،وکلاء صحافی ،عام شہریوں کو نشانہ بنا کر ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ اگست

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 10/08/2016 - 22:17:14 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 22:15:42 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 22:13:48 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 22:05:24 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 22:05:24 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 21:59:25 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 21:58:14 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 21:40:17 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 21:40:17 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 21:37:55 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 21:37:55
پچھلی خبریں - مزید خبریں

نوشکی

کوئٹہ دھماکے کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے ،وکلاء صحافی ،عام شہریوں کو نشانہ بنا کر بلوچستان کے گھر گھر کو صف ماتم میں بدل دیا گیا ہے،سردار اختر مینگل

دھماکہ حکومتی غلط پالیسیوں اور سیکورٹی کی نا قص انتظامات کا نتیجہ ہے ، رکن بلوچستان اسمبلی کی صحافیوں سے بات چیت

نوشکی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔10 اگست ۔2016ء )بلوچستان نیشنل پارٹی کے سربراہ اور رکن صوبائی اسمبلی سردار اختر مینگل نے کہاہے کہ سانحہ کوئٹہ انتہائی دردناک وافسوس ناک واقعہ ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ،وکلاء صحافی ،ہسپتال عملہ اور عام شہریوں کو نشانہ بناکر بلوچستا ن کے گھر گھر کو صف ماتم میں بدل دیاواقعہ حکومتی غلط پالیسیوں اور سیکورٹی کی ناقص انتظامات کا نتیجہ ہے ،اپنی ناکامیوں کو چھپانے کے لئے راء پر الزامات عائد کئے جارہے ہیں ،اگر دہشت گردی کے واقعات میں واقعی راء ملوث ہے تو دیر کس بات کی ہے ،اتنی بڑی فوج موجود ہونے کے باوجود را گلی گلی میں پہنچ گئی ہے ،فوج کو صرف جشن آزادی پر رقص کرنے کے لئے نہیں بنایا گیاہے ،ان خیالات کا اظہار انھو ں نے بی این پی کے رہنماء اور سابق صوبائی وزیر بابو محمد رحیم مینگل کے رہائش گاہ پر صحافیو ں سے بات چیت کرتے ہوئی کیاانھوں نے کہاکہ سانحہ کوئیٹہ کے محرکات ووجوہات ہماری حکومتوں کے غلط پالیسوں کا نتیجہ ہے زاتی فیصلے قوم اور علاقوں کو نظرانداز کرکے زاتی مفادات وزاتی فیصلے صرف اپنے زاتی مفادات کے تحفظ کے لئے کئے جارہے ہیں جن کی وجہ سے آج پورا ملک آگ کے بھٹی میں جل رہاہے ،ہمسایوں کے ساتھ ہمسائیگی کے آداب بھول جانے اور ہمسایوں کے گھروں میں پتھر پھینکنے کے نتائج تو اسی طرف ہی برآمد ہونگے ،غلط پالیسیوں اور فیصلوں کے وجہ سے پاکستان وبلوچستان کا کوئی شہر محفوظ نہیں ہے ،حکمران عقل کے اندھے ہیں اور تجربے کے اوپر تجربے کئے جارہے ہیں ملک کو تجربہ گاہ بنادیا گیا ہے ،مک سے فائدے حاصل کرنے والے طبقات بیرون ملک میں اپنے بچوں کو پڑھا رہے ہیں ،امیرترین ممالک میں جائیدادیں اور قومیتیں حاصل کی ہے جبکہ ملک کے غریب عوام آگ کی اس ہولناک بھٹی میں جل رہے ہیں ،انہوں نے کہاکہ سانحہ کوئیٹہ قدرت کی جانب سے طوفان یازلزلہ نہیں تھا بلکہ سوچی سمجھی سازش تھی ،جس کی زمہ داروں کو بے نقاب کرنا حکومت کا فرض ہے انھوں نے کہاکہ حکمرانوں نے عوام کے خون سرزمین اور سالمیت کو بھیج دیا ہے،اور انکی نسلیں ارب پتی بن چکے ہیں،انھوں نے کہاکہ ملک کے موجودہ حالات کے زمہ داروں میں چاہے سول سائیٹی عدلیہ سیاست دان یافوج کے ادارے ملوث ہیں تو ان کے نام سامنے لایاجائے،انھیں سزا دی جائے اور اثاثوں کی چان بین کی جائے سرداراخترمینگل نے کہاکہ واقعہ کو سی پیک منصوبہ سے جوڑ کر کوئی بری الزمہ نہیں ہوسکتایہ پہلادھماکہ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

10/08/2016 - 21:59:25 :وقت اشاعت