ھنگو میں دو غیر سرکاری تنظیموں کی بے قاعدگیوں کا مسئلہ سنگین
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ اگست

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 10/08/2016 - 16:48:42 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 16:47:07 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 16:46:22 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 16:43:16 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 16:43:13 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 16:42:22 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 16:42:22 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 16:41:23 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 16:41:21 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 16:39:40 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 16:38:53
پچھلی خبریں - مزید خبریں

ہنگو

ھنگو میں دو غیر سرکاری تنظیموں کی بے قاعدگیوں کا مسئلہ سنگین

اورکزئی میں’ سی ای آر ڈی‘ این جی او کی سرگرمیوں پر پابندی عائد

ھنگو (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔10 اگست ۔2016ء) ھنگو میں دو غیر سرکاری تنظیموں کی بے قاعدگیوں کا مسئلہ سنگین․ اورکزئی میں” سی ای آر ڈی“ این جی او کی سرگرمیوں پر پابندی عائد۔ جبکہ ضلع ہنگو میں’پیس ‘آرگنائزیشن ڈبلیو ایف پی کی تعاون سے یونیسف کی پارٹنر شپ میں بے قاعدگیوں کے ریکارڈ قائم کر گیا۔ ایم این اے ڈاکٹر غازی گلاب جمال اورکزئی اورعلاقہ عمائدین نے سرگرمیاں بند کرانے کا اشارہ دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق اورکزئی ایجنسی اور ضلع ہنگو میں صحت کے شعبے میں ورلڈ فوڈ پروگرام ڈبلیو ایف پی اور عالمی ادارہ یونیسف کی تعاون سے سرگرمیوں میں مصروف دو غیر سرکاری تنظیمیں بے قاعدگیوں کے انکشافات کے بعد متنازعہ بن کر علاقائی سطح پر شدید عوامی رد عمل کا نشانہ بن گئے ہیں۔ اورکزئی ایجنسی کے ایم این اے غازی گلاب جمال اورکزئی نے قبائلی اقوام کے عمائدین اور ملکان پر مشتمل ایک قومی گرینڈ جرگہ سے خطاب میں کہا کہ اورکزئی ایجنسی میں بیرونی عالمی اداروں کی تعاون سے کام کرنے والی این جی او” سی ای آر ڈی“ کی جاری پروجیکٹس میں مقامی تعلیمی یافتہ افراد کویکسر نظر انداز کر کے باہر اضلاع کی غیر قانونی بھرتیاں کی گئیں ہیں اور قبائلی علاقہ اورکزئی کے نوجوانوں کے حقوق پر ڈاکہ ڈالا گیا جو کہ نا قابل برداشت ہے۔

انہوں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

10/08/2016 - 16:42:22 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان