گلگت بلتستان کے حوالے سے بنائی جانے والی دستاویزی فلموں کو قومی میڈیا پر روزانہ ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ اگست

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 10/08/2016 - 16:06:39 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 16:01:15 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 16:01:15 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 15:52:01 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 15:42:20 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 15:39:32 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 15:39:32 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 15:28:45 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 15:20:54 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 15:20:54 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 15:20:07
پچھلی خبریں - مزید خبریں

گلگت

گلگت بلتستان کے حوالے سے بنائی جانے والی دستاویزی فلموں کو قومی میڈیا پر روزانہ کی بنیاد پر چلانے کی ضرورت ہے، کامل علی آغا

گلگت۔ 10 اگست (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔10 اگست۔2016ء) سینیٹر کامل علی آغا نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان کے حوالے سے بنائی جانے والی دستاویزی فلموں کو پی ٹی وی پر روزانہ کی بنیاد پر چلانے کی ضرورت ہے تاکہ پاکستان کے دوسرے صوبوں کے لوگوں کو پتہ چل سکے کہ یہ صوبہ قدرتی خوبصورتی میں اپنی مثال آپ ہے۔ سینیٹرز کے دورہ گلگت بلتستان کے موقع پر محکمہ سیاحت کی جانب سے دکھائی جانے والی مختصر دستاویزی فلم دیکھنے کے بعد تمام سینیٹرز کا کہنا تھا کہ گلگت بلتستان کی قدرتی خوبصورتی کا بلا شبہ کوئی ثانی نہیں ہے اوریہ فلمیں قومی میڈیا پر روزانہ دکھانے کے قابل ہیں۔

سینیٹر چوہدری تنویر خان نے بھی کہا کہ وہ اس علاقے میں سیاحت کے فروغ کے لئے حکومت پاکستان کو اپنی بھرپور سفارشات پیش کریں گے تاکہ ٹورزم انڈسٹری اس خطے میں ترقی کر سکے،اس سلسلے میں ان کا کہنا تھا کہ یہ خطہ موسم سرما میں بھی سیاحوں کے لئے کشش کا باعث بن سکتا ہے اس لئے مقامی ہوٹل انڈسٹری اور دیگر سیاحتی سروسز کو مزید بہتر کرنے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اکنامک کوریڈور کیذریعے ہونے والی سرمایہ کاری سے اس خطے میں نئی سروسز اور ملازمتوں کے مواقع ملنے لگیں گے اور ترقیاتی سرگرمیاں بڑھ جائیں گی۔ گلگت بلتستان کا دورہ کرنے والی سینیٹرز کے وفد نے صوبے میں جرائم کی انتہائی کم شرح پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یہ تمام علاقے بلاشبہ پاکستان کے لیے فخر کا باعث ہیں اور ہمیں خوشی ہے کہ اس خطے کی عوام بہت ہی امن پسند ہے اور قانون کا احترام کرتے ہیں۔

سینیٹر میاں محمد عتیق شیخ کا کہنا تھا کہ ان علاقوں میں سیاحت

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

10/08/2016 - 15:39:32 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان