ہلمند میں سیکورٹی فورسز اور عسکریت پسندوں کے درمیان شدید جھڑپوں کا سلسلہ جاری، ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ اگست

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 10/08/2016 - 12:42:47 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 12:42:47 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 12:42:47 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 12:33:06 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 12:33:06 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 12:33:06 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 11:52:39 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 11:51:50 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 11:51:49 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 11:50:25 وقت اشاعت: 10/08/2016 - 11:50:25
پچھلی خبریں - مزید خبریں

ہلمند میں سیکورٹی فورسز اور عسکریت پسندوں کے درمیان شدید جھڑپوں کا سلسلہ جاری، ہلمند میں مقامی کمانڈر سمیت 37 طالبان کو ہلاک کرنے کا دعویٰ ، گورنر ہلمند کی رہائش گاہ پر حملہ پسپا ، بدخشاں میں فضائی کارروائی کے دوران 26 طالبان ہلاک، افغان وزارت دفاع کا داعش کے خراسان شاخ کے سربراہ کو ہلاک کرنے کا دعویٰ

کابل ۔ 10 اگست (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔10 اگست۔2016ء) افغانستان کے صوبہ ہلمند میں سیکورٹی فورسز اور عسکریت پسندوں کے درمیان شدید جھڑپوں کا سلسلہ جاری ہے، حکام نے ہلمند میں مقامی کمانڈر سمیت 37 طالبان کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا ہے، گورنر ہلمند کی رہائش گاہ پر حملے کو فورسز نے پسپا کردیا، بدخشاں میں فضائی کارروائی کے دوران 26 طالبان ہلاک ہوگئے، افغان وزارت دفاع نے داعش کے خراسان شاخ کے سربراہ کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

افغان میڈیا کے مطابق حکام نے بتایا کہ ہلمند کے تین اضلاع میں سیکورٹی فورسز اور طالبان کے درمیان شدید جھڑپوں کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔ ان جھڑپوں میں ایک فوجی کی ہلاکت اور پانچ کے زخمی ہونے کی تصدیق کی گئی ہے۔ حکام نے بتایا کہ ضلع ناد علی ، گارم سیف اور ضلع نوا میں جھڑپوں کا سلسلہ اب تک جاری ہے اور لڑائی میں ایک مقامی کمانڈر سمیت 37 طالبان ہلاک ہوچکے ہیں۔

صوبائی گورنر کے ترجمان نے بتایا کہ ضلع نوا میں گورنر کی رہائش گاہ پر طالبان کے ایک بڑے حملے کو پسپا کردیا

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

10/08/2016 - 12:33:06 :وقت اشاعت