آل کراچی تاجراتحاد کاملک میں دہشت گردی، تخریب کاری اور بدامنی کے بڑھتے ہوئے واقعات ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل اگست

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:52:34 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:52:01 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:52:01 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:52:01 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:50:50 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:48:33 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:48:33 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:48:33 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:44:55 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:44:55 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:42:54
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

آل کراچی تاجراتحاد کاملک میں دہشت گردی، تخریب کاری اور بدامنی کے بڑھتے ہوئے واقعات پر سخت تشویش کا اظہار

ملک کے بیشتر سیاستدان اور حکمران حصولِ اقتدار اور ذاتی مفادات کے تحت ملک مخالف قوتوں کے آلہء کار بن گئے ہیں، عتیق میر

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔9 اگست ۔2016ء) آل کراچی تاجر اتحاد کے چیئرمین عتیق میر نے ملک میں دہشت گردی، تخریب کاری اور بدامنی کے بڑھتے ہوئے واقعات پر سخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ قوم اﷲ کے دشمنوں سے دوستی اور قرب بڑھانے کا بھگتان بھگت رہی ہے، بھارت، امریکہ اور اسرائیل خطے پر حکمرانی کا خواب دیکھ رہے ہیں، ملک کے بیشتر سیاستدان اور حکمران حصولِ اقتدار اور ذاتی مفادات کے تحت ملک مخالف قوتوں کے آلہء کار بن گئے ہیں، عوام اور تاجر یوم آزادی پر وطنِ عزیز سے محبت کے لازوال جذبے کا مظاہرہ کریں، ان خیالات کا اظہار انھوں نے گذشتہ روز انجمنِ فلاح و بہبود تاجران لائٹ ہاؤس کی جانب سے حسن علی آفندی گراؤنڈ میں منعقد کی گئی ملک کی69ویں یومِ آزادی کی ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اس موقع تقریب کے مہمانِ خصوصی پاکستان رینجرزسندھ 61ونگ کے ونگ کمانڈر لیفٹیننٹ کرنل شاہد امیر خان، میجر محمد عنایت درانی اور تقریب کے میزبان سید حکیم شاہ نے بھی خطاب کیا جبکہ تاجروں اور شہریوں کی کثیر تعداد تقریب میں موجود تھی، عتیق میر نے کہا کہ ہم اغیار کی تہذیب کے تعاقب میں اسلامی اقدار سے بہت دور نکل آئے ہیں،ہمیں اس تلخ حقیقت کو تسلیم کرنا ہوگا کہ اغیار کی تہذیب و تمدن کی روش اختیار کرکے ہم تباہی کے مقام پر آ چکے ہیں، قوم جس سفر پر گامزن ہے وہ اس منزل کا راستہ نہیں جو قیامِ پاکستان کا بنیادی مقصد تھا، دو قومی نظریہ بھارتی اور مغربی ثقافت کے ملبے تلے دب گیا ہے، ملک میں باہمی اتفاق، اتحاد اور تنظیم کا فقدان ہے، انھوں نے کہا کہ اقتدار کے مہروں کی تبدیلی سے ملکی حالات میں بہتری ممکن نہیں ہے، آزمودہ اورفرسودہ نظام کے غلاموں سے امیدیں وابستہ کرنا خودفریبی

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

09/08/2016 - 17:48:33 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان