وکلاء برادری کو نشانہ بنانے کا مقصد انصاف کے حصول کا راستہ روکنا ہے ،حکومتی ترجیحات ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل اگست

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:38:25 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:38:25 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:37:12 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:37:12 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:37:12 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:35:43 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:35:43 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:35:43 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:35:28 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:34:32 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:34:32
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

وکلاء برادری کو نشانہ بنانے کا مقصد انصاف کے حصول کا راستہ روکنا ہے ،حکومتی ترجیحات غلط ہیں‘ایک خاندان کی سیکیورٹی کا خرچ پورے ملک کی سکیورٹی کے خرچ سے زیادہ ہے‘موجودہ حالات سے نمٹنے کیلئے جنگی کابینہ بنائی جائے‘ اس کیلئے جنگی بجٹ مختص کیا جائے

سابق وفاقی وزیر اور پیپلزپارٹی کے رہنما سینیٹر بابر اعوان کا وکلاء کی احتجاجی ریلی سے خطاب

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔9 اگست ۔2016ء)سابق وفاقی وزیر اور پیپلزپارٹی کے رہنما سینیٹر بابر اعوان نے کہا کہ حکومتی ترجیحات غلط ہیں،ایک خاندان کی سیکیورٹی کا خرچ پورے ملک کی سکیورٹی کے خرچ سے زیادہ ہے،موجودہ حالات سے نمٹنے کیلئے جنگی کابینہ بنائی جائے اور اس کیلئے جنگی بجٹ مختص کیا جائے۔بدھ کوایف ایٹ کچہری میں وکلاء کی احتجاجی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ وکلاء برادری کو نشانہ بنانے کا مقصد انصاف کے حصول کا راستہ روکنا ہے۔

انہوں نے کہاکہ فوج ہر جگہ ملکی بقاء کی جنگ لڑ رہی ہے،حکمران جماعت کی پالیسیوں پر تنقید کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ جب تک حکمران ترجیحات کا درست ادراک نہیں کریں گے اس وقت تک دہشتگردی سے چھٹکارا پانا مشکل ہے،شریف خاندان کی ذاتی سکیورٹی کے اخراجات ملک کے مجموعی سیکیورٹی کے خرچ سے زیادہ ہے۔انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ شہداء کے لواحقین کو ایک ایک

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

09/08/2016 - 17:35:43 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان