امریکا گولن کی وجہ سے تعلقات قربان نہ کرے، ترکی کا انتباہ
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل اگست

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 09/08/2016 - 17:34:32 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 16:52:47 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 16:52:21 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 16:52:21 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 16:52:21 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 16:51:50 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 16:51:50 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 16:51:50 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 16:48:52 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 16:48:52 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 16:48:52
پچھلی خبریں - مزید خبریں

امریکا گولن کی وجہ سے تعلقات قربان نہ کرے، ترکی کا انتباہ

انقرہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔09 اگست ۔2016ء)ترکی نے امریکا کو خبردار کیا ہے کہ وہ دونوں ممالک کے باہمی تعلقات کو فتح اللہ گولن کی وجہ سے قربان نہ کرے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق ترک وزیر انصاف بیِکر بوزداگ نے انقرہ میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگر امریکا گولن کو انقرہ کے حوالے نہیں کرتا تو وہ ایک دہشت گرد کی وجہ سے ترکی کے ساتھ تعلقات قربان کرے گا۔

ترکی کی طرف سے مسلسل واشنگٹن سے مطالبہ کیا جا رہا ہے کہ وہ گولن کو ملک بدر کرے۔ ترکی پینسلوینیا میں خود ساختہ جلاوطنی کی زندگی گزارنے والے مذہبی رہنما گولن کو ناکام فوجی بغاوت کا ذمہ دار قرار دیتا ہے۔ تاہم گولن خود کو اس معاملے میں بے قصوروار قرار دیتے ہیں۔ترک وزیر انصاف بیکِر بوزداگ نے کہا کہ گزشتہ ماہ کی ناکام فوجی بغاوت کی تحقیقات کے سلسلے میں 16 ہزار افراد کو باقاعدہ طور پر گرفتار کر کے ان سے تحقیقات کی جا رہی ہیں جبکہ 6000 دیگر زیر حراست لوگوں کے معاملے پر کارروائی کی جا رہی ہے ۔انکا کہنا تھاکہ ساڑھے سات ہزار سے زائد دیگر لوگوں سے بھی تحقیقات کی جا رہی ہیں مگر انہیں گرفتار نہیں کیا گیا۔
09/08/2016 - 16:51:50 :وقت اشاعت