فکسنگ کا طوفان چار پروٹیز کرکٹرز کے کیریئر بہالے گیا
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل اگست

مزید کھیلوں کی خبریں

وقت اشاعت: 09/08/2016 - 15:07:57 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 14:36:27 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 14:36:24 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 14:36:20 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 14:35:09 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 14:35:05 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 14:35:02 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 14:03:34 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 14:03:30 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 14:03:28 وقت اشاعت: 09/08/2016 - 13:59:34
پچھلی خبریں - مزید خبریں

فکسنگ کا طوفان چار پروٹیز کرکٹرز کے کیریئر بہالے گیا

جوہانسبرگ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔09 اگست ۔2016ء) جنوبی افریقہ میں فکسنگ کا طوفان چار کرکٹرز کے کیریئر بہالے گیا، ٹیسٹ پلیئر تھامی ٹسولیکل پر 12 برس کیلئے کھیل کے دروازے بند کردیے گئے، تین ڈومیسٹک کھلاڑی بھی پکڑ میں آگئے، پروٹیز بورڈ کے چیف ایگزیکٹیو ہارون لورگاٹ کا کہنا ہے کہ سزائیں معلومات چھپانے پر دی گئیں، کوئی میچ فکس نہیں کیا گیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق کرکٹ جنوبی افریقہ نے گذشتہ برس ٹی 20 ٹورنامنٹ کے حوالے سے ہونے والی فکسنگ تحقیقات کے نتیجے میں چار کھلاڑیوں پر 7 سے 12 برس تک کی پابندی عائد کردی ہے۔ان میں سابق ٹیسٹ وکٹ کیپر تھامی ٹسولیکل سمیت جین سیمیس، پومیلیلیا میٹ شکوے اور ایتھی مبھالاتی شامل ہیں۔ ٹسولیکل پر 12 برس کی پابندی عائد کی گئی ہے، ان کے بارے میں کہا گیا ہے کہ انھوں نے گذشتہ برس فکسنگ کے لیے ہونے والے رابطے سے کرکٹ حکام کو مطلع نہیں کیا تھا، 35 سالہ ٹسولیکل نے بیک اپ وکٹ کیپر کے طورپر 2003 میں انگلینڈ کا دورہ

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

09/08/2016 - 14:35:05 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان