پاکستان اور امریکہ کی پارلیمانوں کے مابین وسیع تعلقات علا قائی چیلنجز کو حل کرنے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر اگست

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 09/08/2016 - 00:14:26 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 22:56:06 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 22:56:06 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 22:55:02 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 22:55:02 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 22:55:02 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 22:45:49 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 22:44:54 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 22:44:54 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 22:44:54 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 22:43:39
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

اسلام آباد شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:36 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:38 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:39 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 10:35:10 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:41 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:41 اسلام آباد کی مزید خبریں

پاکستان اور امریکہ کی پارلیمانوں کے مابین وسیع تعلقات علا قائی چیلنجز کو حل کرنے میں کلیدی کردار اد ا کر سکتے ہیں

سپیکر قومی اسمبلی سر دار ایاز صادق کی امریکی کانگریس کے رکن کرسپ سٹیوارٹ سے گفتگو

اسلام آباد ۔ 8 اگست (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔8 اگست ۔2016ء) سپیکر قومی اسمبلی سر دار ایاز صادق نے کہا ہے کہ پاکستان اور امریکہ کی پارلیمانوں کے مابین وسیع بنیادوں پر تعلقات علا قائی چیلنجز کو حل کرنے میں کلیدی کردار اد ا کر سکتے ہیں، دونوں ممالک کے مابین دیرینہ دوستانہ تعلقات موجود ہیں جو باہمی اعتماد اور دوستی کی بنیادوں پر استوار ہیں۔

انہوں نے ان خیالات کا اظہار امریکی کانگریس کے رکن کرسپ سٹیوارٹ سے گفتگو کرتے ہوئے کیا جہنوں نے پیر کو پارلیمنٹ ہاؤس میں ان سے ملا قات کی۔ اس موقع پر پاکستان میں تعینات امریکی سفیر ڈیوڈ ہیل بھی موجود تھے۔ سپیکر نے پاک۔امریکہ تعلقات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ امریکہ نے ابتدا ہی سے پاکستان کی سماجی، معاشی اور افرادی قوت کی تر قی میں شر اکت دار کا کردار ادا کیا ہے۔

انہوں نے 9/11 کے بعد رونما ہونے والی صورت حال کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ممالک کے مابین تعلقات صر ف سٹرٹیجک مفادات تک ہی محدود نہیں بلکہ دونوں ممالک میں سائنس، اقتصادیات، تعلیم، زراعت انسانی حقوق گڈ گورننس کے شعبوں اور جمہوریت کے استحکام کیلئے وسیع تعاون موجود ہے۔ سر دار ایاز صادق نے کہا کہ دہشت گردی اور انتہا پسندی کا تعلق براہ راست تصفیہ طلب تنازعات سے ہے بین الا قوامی برادری کو ان تنازعات ،جارحیت اور حق خود ارادیت کے انکار جیسے مسائل کے حل پر فوری توجہ دینے کی ضر ورت ہے ۔

انہوں نے دہشت گردی کے خلاف پاکستان کی کاوشوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستانی عوام کی طر ف سے دی جانے والی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی سیاسی اور فوجی قیادت ملک سے دہشت گردی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

08/08/2016 - 22:55:02 :وقت اشاعت