چین میں رشوت وصول کرنے کے الزام میں چار سرکاری اہلکاروں سے تفتیش کا آغاز
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر اگست

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 08/08/2016 - 22:45:49 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 22:43:39 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 22:23:01 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 22:15:12 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 22:15:12 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 22:15:12 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 21:46:21 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 21:42:59 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 21:29:21 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 21:24:20 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 20:47:15
- مزید خبریں

چین میں رشوت وصول کرنے کے الزام میں چار سرکاری اہلکاروں سے تفتیش کا آغاز

بیجنگ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔8 اگست ۔2016ء )چین کے سپریم پیپلز پروکیوریٹوریٹ نے کہا ہے کہ رشوت وصول کرنے کے الزام میں چار سرکاری اہلکاروں سے تفتیش جاری ہے۔ پیپلز پروکیوریٹوریٹ کی جانب سے پیر کو جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ سی پی سی کے سابق ڈپٹی انسپیکٹر مینگ فان یو سی پی سی کے مرکزی دفتر کے سابق انسپیکٹر لیو جنگ ہائی ، چینگ ڈو کے سابق میئر لو یو فو اور ہنان پریس گروپ کے سابق جنرل منیجر پیلن سے رشوت وصول کرنے کے الزام میں تفتیش کا آغاز کیا گیا ہے۔ مینگ اور لیو پر بدعنوانی کا بھی الزام ہے جبکہ پیلن بھی سرکاری خزانے کا غلط استعمال کرتے ہوئے پائے گئے ہیں۔ چاروں اہلکاروں کو گرفتار کر کے جیل بھیجا گیا۔

08/08/2016 - 22:15:12 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان