اردو ایک مضبوط ،منفرد اور مرکزی حیثیت کی حامل زبان ہے،تحریک آزادی و تحریک پاکستان ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر اگست

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 08/08/2016 - 18:13:02 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 18:11:52 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 18:11:23 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 18:11:23 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 18:11:23 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 18:06:59 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 18:05:25 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 18:04:00 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 18:04:00 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 18:01:47 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 18:01:47
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

اسلام آباد شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:36 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:38 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:39 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 10:35:10 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:41 وقت اشاعت: 17/01/2017 - 11:10:41 اسلام آباد کی مزید خبریں

اردو ایک مضبوط ،منفرد اور مرکزی حیثیت کی حامل زبان ہے،تحریک آزادی و تحریک پاکستان میں اردو انتہائی اہمیت کی حامل رہی

امریکن سکالر اینڈریو ایمسٹز کاا نٹر یونیورسٹی کنسورشیم، پیس اینڈ ڈپلومیٹک اسٹڈیزکے زیر اہتمام سیمینار سے خطاب

اسلام آباد ( اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔8 اگست ۔2016ء ) امریکن سکالر اینڈریو ایمسٹزنے کہاہے کہ قیام پاکستان سے قبل حید ر آباد دکن میں اردو کو سرکاری زبان کی حیثیت حاصل تھی اردونہ صرف ایک قومی زبان بلکہ بین الاقوامی روابط میں بھی الگ مقام و حیثیت کی حامل ہے ۔ وہ پیرکو انٹر یونیورسٹی کنسورشیم، پیس اینڈ ڈپلومیٹک اسٹڈیز کے زیر اہتمام نیشنل بک فاؤنڈیشن کے کانفرنس روم میں قومی زبان کی اہمیت اور بیرونی ممالک میں اردو کے عنوان سے منعقدہ مذاکرہ میں اپنے خیالات کا اظہار کر رہے تھے ۔

مذاکرہ میں میزبانی کے فرائض فرحت آصف نور نے انجام دئے ۔اس موقع پر پرفیسر قیصرہ علوی ،اشرف انصاری ،محمد آصف ،مرتضیٰ نور ،شہزاد اقبال ، اور میڈیا کے نامور لوگوں سمیت اہل علم و ادب نے بھرپور شرکت کی ۔مسٹر اینڈریو نے تحریک آزادی و تحریک پاکستان میں اردو کی اہمیت کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مغل اور انگریز حکمرانوں نے اپنے حکومتی مفادات کے لئے اردو

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

08/08/2016 - 18:06:59 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان