اب کی بار استعفیٰ دیا تو اکیلا نہیں ہونگا (ن)لیگ کے 14ممبران اسمبلی کو بھی ساتھ لے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر اگست

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 08/08/2016 - 17:54:31 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 17:54:31 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 17:53:08 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 17:51:12 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 17:51:12 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 17:49:44 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 17:45:46 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 17:43:38 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 17:43:38 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 17:36:52 وقت اشاعت: 08/08/2016 - 17:36:52
پچھلی خبریں - مزید خبریں

راولا کوٹ

اب کی بار استعفیٰ دیا تو اکیلا نہیں ہونگا (ن)لیگ کے 14ممبران اسمبلی کو بھی ساتھ لے کر آئیں گے،سردا ر خالد ابراہیم

راولاکوٹ کے لوگوں نے نظریہ پاکستان کو ووٹ دئیے اُنہیں اس نظریہ کا خیال رکھنا ہو گا (ن) لیگ کی وجہ سے اگر میں جیتا ہوں تو حلقہ 4کی نشست اُن کی وجہ سے میری پارٹی ہاری بھی ہے , مسعود خان ایماندار اور باوقار ملازم رہا ہے اُسے چاہیے وہ چاکر نہ بنے، حاجی یعقوب کے حشر سے برا حشر آزاد کشمیر کے نئے حکمرانوں کا ہو گا،صدر کا اگلا انتخاب براہ راست ہو گا اور میں منتخب ہو کر دکھاؤں گا،راولاکوٹ میں جلسے سے خطاب

راولاکوٹ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔8 اگست ۔2016ء) جے کے پی پی کے سربراہ خالد ابراہیم خان نے کہا ہے کہ اگر وہ قانون ساز اسمبلی سے استعفیٰ دے کر آئے تو اب کی بار وہ اکیلے نہیں ہوں گے بلکہ (ن)لیگ کے 14ممبران اسمبلی کو بھی ساتھ لے کر آئیں گے،راولاکوٹ کے لوگوں نے نظریہ پاکستان کو ووٹ دئیے اُنہیں اس نظریہ کا خیال رکھنا ہو گا،نواز شریف سے میرا کوئی معائدہ نہیں ہوا تھا اور نہ مجھے غرض ہے کہ نواز شریف میرے بارے میں کیا سوچتے ہیں ،(ن) لیگ کی وجہ سے اگر میں جیتا ہوں تو حلقہ 4کی نشست اُن کی وجہ سے میری پارٹی ہاری بھی ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے رولاکوٹ میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس سے قبل ریلی کا انعقاد کیا گیا اور کچہر ی روڈ میں ٹریفک جام ہوگیا ۔ سردار خالد ابراہیم نے کہا کہ بینظیر سے معائدہ نہیں کیا تھا نواز شریف سے کیسے کرتا؟ دنیا کی تاریخ میں سب سے بڑی سیاسی بد دیانتی اب کی بار آزادکشمیر میں ہوئی جہاں حکومت نے ہی اپوزیشن بھی بنائی،لاہور سے جو لوگ آج آزاد کشمیر میں اپنے ملازم مسلط کر رہے ہیں انہیں ناکام کر کہ دم لوں گا،مہاراجہ کے دور میں جس طرح مہارانیوں کی پالکیں اٹھوائی جاتی تھیں اب جب کہ رائے ونڈ سے ایک پینل میں اپنا نام اُس انداز میں دیکھا تو مجبورا رائے ونڈ کا حکم مسترد کرنا پڑا باوجود اس کہ کہ آج مہاراجہ کہ دور کی طرح کالی بھیڑیں موجود ھیں ثابت کیا کہ زندہ کھالیں کھنچوانے والوں کے وارث زندہ ہیں جو ماڈل ٹاؤن کی پالکیان کبھی نہیں اُٹھائیں گے، نواز شریف اچھا آدمی ضرور ہے مگر لیڈر نہیں ہے اور میں اس کی سوچ کے ساتھ نیں چل سکتا اور نہ اُس کی ملازم بیٹی قبول ہے،مسعود خان ایماندار

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

08/08/2016 - 17:49:44 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان