اثاثے چھپانے کا رواج اور کرپشن کی عادت ختم کئے بغیر ملک مستحکم نہیں ہو سکتا،عمران ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:51:31 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:50:30 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:50:30 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:50:30 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:49:05 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:49:05 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:48:44 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:48:44 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:48:44 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:43:31 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:40:54
پچھلی خبریں - مزید خبریں

وزیر آباد

اثاثے چھپانے کا رواج اور کرپشن کی عادت ختم کئے بغیر ملک مستحکم نہیں ہو سکتا،عمران خان

حکمران پنجاب پولیس کو غیر سیاسی نہیں ہونے دیتے،ارکان اسمبلی کو بلدیاتی کونسلروں کے کام پر لگاکر ان کو قانون سازی سے دور کردیا گیا ہے , ترقیاتی فنڈز نچلی سطح پر منتقل ہونا چاہئیں،(ن)لیگ والوں کے پاس جیتنے کے لئے صرف دھاندلی کا راستہ رہ گیا ہے، وزیرآباد میں ضمنی الیکشن میں پارٹی امیدوار کی انتخابی مہم کے سلسلہ میں جلسہ عام سے خطاب

وزیرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔17 مارچ۔2016ء)پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہا ہے کہ اثاثے چھپانے کا رواج اور کرپشن کی عادت ختم کئے بغیر ملک مستحکم نہیں ہو سکتا۔حکمران پنجاب پولیس کو غیر سیاسی نہیں ہونے دیتے۔ارکان اسمبلی کو بلدیاتی کونسلروں کے کام پر لگاکر ان کو قانون سازی سے دور کردیا گیا ہے ۔ترقیاتی فنڈز نچلی سطح پر منتقل ہونا چاہئیں۔

(ن)لیگ والوں کے پاس جیتنے کے لئے صرف دھاندلی کا راستہ رہ گیا ہے۔وہ وزیرآباد میں حلقہ این اے 101کے ضمنی الیکشن میں محمد احمد چٹھہ کی انتخابی مہم کے سلسلہ میں ایک جلسہ عام سے خطاب کر رہے تھے۔ عمران خان نے کہا کہ کے پی کے میں بلدیاتی نمائندوں کو فعال کر کے ترقیاتی کاموں کے لئے 44ارب روپے نچلی سطح پر منتقل کئے ہیں جبکہ پنجاب میں اختیارات نچلی سطح پر منتقل نہیں کئے جا رہے ہیں اور ارکان اسمبلی سے بلدیاتی کونسلروں کا کام لیا جا رہا ہے بلکہ یہاں صرف وہ کام ہوتا ہے جس کا مغل اعظم حکم کر تے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب میں ترقیاتی فنڈز بھی رشوت کے طور پر دیئے جاتے ہیں ۔جب تک حکمرانوں کا رویہ نہیں بدلے گا تب تک غلامی کا کلچر قائم رہے گا۔انہوں نے کہا کہ سرکاری ملازمین کی ترقیاں اور تبادلوں کے لئے رائے ونڈ کے دربار میں حاضری دینا ضروری ہے۔انہوں نے کہا کہ نواز شریف کے اربوں روپے کے اثاثے ملک سے باہر ہیں جو ان کے اپنے نام پر نہیں بلکہ دوسروں کے نام پر رکھے ہوئے ہیں۔

اس کے بر عکس ہم نے اپنے تمام اثاثے اپنے نام پر اور ملک کے اندر رکھے ہوئے ہیں اور یہ کام ہم نے الیکشن میں آنے سے قبل مکمل اور واضح کیا تھا۔انہوں نے کہا کہ حکمرانوں نے مہنگے پراجیکٹ شروع کر رکھے ہیں جن کے لئے انہیں قرضوں کی ضرورت پڑتی ہے ۔8سال قبل ہر پاکستانی صرف 35ہزار روپے کا مقروض تھا جبکہ آج ہر فرد ایک لاکھ 20ہزار روپے کا مقروض ہے اور ملک 900ارب کا مقروض ہو چکا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ ملک میں کرپشن ،ٹیکس چوری اور اثاثے چھپانے کے کلچر کو فروغ دیا گیا ہے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

17/03/2016 - 22:49:05 :وقت اشاعت