پرویز مشرف کے آنے جانے سے کوئی فرق پڑے گا،انصاف کے تقاضے ضرور پورے ہونے چائیں
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات مارچ

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:19:59 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:19:59 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:19:59 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:18:49 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:18:49 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:18:49 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:17:32 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:17:32 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:17:32 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:15:16 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 22:15:16
پچھلی خبریں - مزید خبریں

ملتان

پرویز مشرف کے آنے جانے سے کوئی فرق پڑے گا،انصاف کے تقاضے ضرور پورے ہونے چائیں

بلوچ رہنما روؤف ساسولی کی ملتان میں میڈیا سے گفتگو

ملتان ( اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔17 مارچ۔2016ء) جمہوری وطن پارٹی کے سابق سیکریٹری جنرل سینئر بلوچ رہنما رؤف خان ساسولی نے کہا ہے کہ پرویز مشرف کے آنے جانے سے کوئی فرق پڑے گا تاہم انصاف کے تقاضے ضرور پورے ہونے چاہیں۔کسی کو قانون سے مستشنی اور بالاتر نہیں سمجھنا چاہیئے۔ مولانا فضل الرحمن کی ناراضگی زیادہ دیر پا نہیں ہو گی ۔پیپلز پارٹی اور (ن) لیگ کو انہیں راضی کرنے کے گر آتے ہیں۔

بلوچستان اور سرائیکی وسیب کی پسماندگی کے خاتمے کے لئے اقدامات کو یقینی بنایا جا ئے۔ اب کوئی جیتے یا ہارے غریب آدمی کے مسائل پر کوئی فرق نہیں پڑے گا کیونکہ سیاست اب پجارو سے نکل کر ہیلی کاپٹر تک پہنچ کی ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز ملتان آمد پر مقامی ہو ٹل میں سینئر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہو ئے کیا ۔رؤف خان ساسولی نے مزید کہا کہ چاروں صوبوں کی مزدور ،کسان ،وکلاء اور مڈل کلاس کو اب متحد ہوجانا چاہیئے کیونکہ سیاسی جماعتوں میں عام آدمی کی کوئی نمائندگی نہیں ہے۔

پہلے ہی سیاستدان غریب آدمی سے بہت دور تھے اور کبھی کبھی غریب آدمی پجارو کے سامنے لیٹ کر اپنی بات منوا لیتے تھے لیکن آج سیاست پجارو سے نکل کر ہیلی کاپٹر تک پہنچ چکی ہے ،ایسی صورتحال میں کوئی جیتے یا ہارے ان کے مسائل پر کوئی فرق نہیں پڑے گا۔ انہوں نے کہا کہ خورشید شاہ اور میاں صاحب کے گٹھ جوڑ نے غریب آدمی کے مفادات کو دھچکا لگا یاہے صرف ایک شخص چوہدری نثار علی خان ہی ہیں جو ملک وقوم کا درد رکھتے ہیں اور لٹیروں ،مجرموں کے تعاقب میں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ 23قومی اداروں میں سوائے پاک فوج کے علاوہ کہیں بھی شفاف بھرتیاں نہیں ہوتیں ضرورت اس امر کی ہے کہ قومی اداروں کو سیاسی و گروہی وابستگی سے بالا تر ہو کر صاف اور شفاف بھرتیاں کرنی چاہیئں اور بھرتیوں بارے جائزہ کمیٹی بنائی جائے کیونکہ پیپلز پارٹی ، (ن) لیگ اور (ق ) لیگ میں بہت سیاسی بھرتیاں ہو ئی ہیں۔ مصطفی کمال کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اگر کوئی راہ راست اور سچائی کی طرف آتا ہے تو اس کو خوش آمدید کہنا چاہیئے تاہم مصطفی کمال اگر کچھ سال قبل آجاتے تو شائد کراچی میں مزید جانیں ضائع نہ ہو تیں انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں عسکری قیادت کے بہتر اقدامات کی وجہ سے مثبت نتائج برآمد ہو ئے ہیں امید ہے مزید بہتری بھی آئے گی ۔

17/03/2016 - 22:18:49 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان