یمن کو دوسرا لیبیا نہیں بننے دیں گے، اتحاد کی بڑی کارروائیاں اختتام کے قریب ہیں، ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات مارچ

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 17/03/2016 - 11:41:40 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 11:38:10 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 11:38:10 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 11:38:10 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 11:35:48 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 11:35:48 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 11:35:48 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 11:29:53 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 11:29:53 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 11:29:53 وقت اشاعت: 17/03/2016 - 11:29:07
پچھلی خبریں - مزید خبریں

یمن کو دوسرا لیبیا نہیں بننے دیں گے، اتحاد کی بڑی کارروائیاں اختتام کے قریب ہیں، سعودی مشیر دفاع

ریاض(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔17 مارچ۔2016ء) سعودی وزیر دفاع کے فوجی مشیر اور عرب اتحادی افواج کے ترجمان بریگیڈیئر جنرل احمد عسیری نے کہا ہے کہ یمن میں اس اتحاد کی بڑی کارروائیاں اختتام کے قریب ہیں، تاہم یمن کو طویل المدت سپورٹ کی ضرورت رہے گی تاکہ وہ دوسرا لیبیا نہ بن جائے۔ریاض میں ایک مغربی خبر رساں ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے عسیری نے کہا کہ گزشتہ ہفتے ہونے وساطت کاری کی کوششوں کے بعد سعودی عرب اور یمن کی سرحدی پٹی پر لڑائی کا سلسلہ تقریبا رک چکا ہے۔

سعودی عرب کے زیرقیادت اتحادی افواج میں کئی عرب ممالک شامل ہیں۔ اس اتحاد نے 26 مارچ 2015 کو یمن میں وسیع علاقے پر قبضہ کر لینے والے حوثی باغیوں اور ان کے حلیفوں کے خلاف بڑے آپریشن کا آغاز کیا تھا۔اتحادی افواج کے مدد سے یمن کی سرکاری فوج ملک کے جنوب میں ایک بڑے حصے کو واپس لینے میں کامیاب ہو گئی اور اب وہ دارالحکومت صنعاء کی جانب پیش قدمی کر رہی ہے۔

بریگیڈیئر جنرل عسیری کا کہنا ہے کہ ہم اس وقت بڑے معرکوں کے اختتامی مرحلے میں داخل ہو چکے ہیں۔انہوں نے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

17/03/2016 - 11:35:48 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان