پنجاب میں گزشتہ سال تقریباً 2لاکھ 20ہزار 380 ایکڑ رقبہ پر مونگ پھلی کاشت کی گئی
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ مارچ

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 16/03/2016 - 21:01:14 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 21:01:14 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 21:00:01 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 20:57:37 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 20:45:47 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 20:45:24 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 20:45:23 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 20:43:13 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 20:43:13 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 20:41:02 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 20:41:02
پچھلی خبریں - مزید خبریں

فیصل آباد

پنجاب میں گزشتہ سال تقریباً 2لاکھ 20ہزار 380 ایکڑ رقبہ پر مونگ پھلی کاشت کی گئی

76ہزار 820ٹن پیداوار حاصل ہوئی

فیصل آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔16 مارچ۔2016ء)پنجاب میں گزشتہ سال تقریباً 2لاکھ 20ہزار 380 ایکڑ رقبہ پر مونگ پھلی کاشت کی گئی جس سے 76ہزار 820ٹن پیداوار حاصل ہوئی۔ مونگ پھلی کے زیر کاشت کل رقبہ کا 92 فیصد پنجاب، 7 فیصد صوبہ سرحد اور ایک فیصد صوبہ سندھ میں کاشت ہوتا ہے۔ پنجاب میں زیر کاشت رقبہ کا 87 فیصد راولپنڈی ڈویژن میں ہے جو کہ چکوال، اٹک، جہلم اور راولپنڈی کے اضلاع پر مشتمل ہے۔

محکمہ زراعت پنجاب کے ترجمان نے کاشتکاروں کو سفارش کی ہے کہ وہ مونگ پھلی کی کاشت مارچ کے آخری ہفتہ سے اپریل کے پہلے پندھواڑے تک مکمل کریں۔ کاشتکار مونگ پھلی کی بروقت کاشت کر کے پیداوار میں اضافہ کریں اور ملک کو خوردنی تیل میں خود کفیل بنائیں۔ مونگ پھلی بارانی علاقوں میں موسم خریف کی اہم ترین نقدا ٓور فصل ہے اور اس کے بیج میں 56 فیصد تک اعلیٰ معیار کا خوردنی تیل اور 30فیصد تک لحمیات پائے جاتے ہیں جو انسانی صحت

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

16/03/2016 - 20:45:24 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان