پاکستان اور ترکمانستان کے درمیان ، مالیاتی انٹیلی جنس اور دہشتگردوں کی مالی معاونت ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 16/03/2016 - 19:35:46 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 19:35:46 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 19:34:03 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 19:34:03 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 19:32:26 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 19:32:26 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 19:32:26 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 19:30:02 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 19:30:02 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 19:30:02 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 19:26:39
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

پاکستان اور ترکمانستان کے درمیان ، مالیاتی انٹیلی جنس اور دہشتگردوں کی مالی معاونت روکنے کیلئے مشترکہ اقدامات سمیت مختلف شعبوں میں تعاون کے 8 معاہدے طے

سمجھوتوں پر دستخطوں سے باہمی تعلقات کو فروغ حاصل ہو گا، پاکستان کو ترقی کرتا ملک دیکھنا چاہتے ہیں، دونوں ممالک توانائی کے شعبے میں تعاون کو مزید فروغ دے سکتے ہیں، تاپی گیس پائپ لائن منصوبے سے خطے کے ملکوں کو فائدہ ہو گا ، ترکمانستان کے صدر قربان علی محمد وف کا تقریب سے خطاب

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔16 مارچ۔2016ء) پاکستان اور ترکمانستان کے درمیان وزارت خارجہ، مالیاتی انٹیلی جنس، اعلیٰ تعلیم ، امن و ترقی کے فروغ، دہشت گردوں کی مالی معاونت روکنے کیلئے مل کر اقدامات اٹھانے سمیت مختلف شعبوں میں تعاون کے 8 معاہدے طے پا گئے، وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ علاقائی روابط 2025 کے وژن کا اہم ستون ہیں، خطے میں تجارت کیلئے پاکستان مرکزی گزرگاہ کی حیثیت رکھتا ہے، مشترکہ بزنس فورس سے باہمی تجارت اور سرمایہ کاری بڑھے گی، بنیادی ڈھانچوں کی ترقی سے عوامی رابطوں اور سیاست کو فروغ حاصل ہو گا، تاپی منصوبے سے پاکستان میں گیس کی کمی پر قابو پانے میں مدد ملے گی، دہشت گردی ہماری سماجی اور اقتصادی ترقی کی راہ میں بڑی رکاوٹ ہے، ہمیں دہشت گردی اور انتہاء پسندی کے خاتمے کیلئے مل کر کام کرنا ہو گا،پاکستان خطے کے وسیع تر مفاداور عالمی امن کیلئے مل کرکام کرنے لئے تیار ہیں جبکہ ترکمانستان کے صدر قربان علی محمد وف نے کہا کہ سمجھوتوں پر دستخطوں سے دونوں ملکوں کے باہمی تعلقات کو فروغ حاصل ہو گا، پاکستان کو ترقی کرتا ہوا دیکھنا چاہتے ہیں،دونوں ملک خطے میں امن کے فروغ کیلئے مل کر کام کر سکتے ہیں، افغانستان میں مفاہمتی عمل کی حمایت پر پاکستان کے شکر گزار ہیں،پاکستان اور ترکمانستان توانائی کے شعبے میں تعاون کو مزید فروغ دے سکتے ہیں، تاپی گیس پائپ لائن منصوبے سے خطے کے ممالک کو فائدہ ہو گااور معاشی استحکام آئے گا، دونوں ملکوں میں دوطرفہ ثقافتی اور سماجی تعلقات کو مزید فروغ دینے کی ضرورت ہے۔

بدھ کو پاکستان کے 2روزہ سرکاری دورے پر آئے ترکمانستان کے صدر قربان علی محمد وف نے وزیراعظم ہاؤس کا دورہ کیا، اس دوران دونوں ممالک کے درمیان وفود کی سطح پر مذاکرات ہوئے، جس میں پاکستانی وفد کی قیادت وزیراعظم نواز شریف جبکہ ترکمانستان کے وفدکی قیادت صدر قربان محمد وف نے کی۔ مذاکرات میں دونوں ملکوں کے درمیان مختلف شعبوں میں تعاون بڑھانے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

مذاکرات کے بعد دونوں ملکوں کے درمیان مختلف شعبوں میں تعاون کی مفاہمتی یادداشتوں پر دستخط کی تقریب ہوئی، جس میں وزیراعظم نواز شریف اور ترکمانستان کے صدر قربان علی محمد وف نے شرکت کی۔ اس موقع پر پاکستان اور ترکمانستان کی وزارت خارجہ کے درمیان تعاون کے سمجھوتے پر دستخط کئے گئے۔ وزیراعظم کے معاون خصوصی طارق فاطمی اور ترکمانستان کے وزیر خارجہ نے دستخط کئے۔

دونوں ملکوں کے درمیان مالیاتی انٹیلی جنس کے شعبے میں بھی تعاون کا معاہدہ طے پا گیا، جس کے تحت منی لانڈرنگ اور دہشت گردوں کی مالی معاونت روکنے کے اقدامات کئے جائیں گے۔ وفاقی وزیر خزانہ سینیٹر اسحاق ڈار اور ترکمانستان کے وزیر خزانہ محمد علی وف نے یادداشت پر دستخط کئے۔ دونوں ممالک کے درمیان آئی ٹی ڈیپارٹمنٹ کامسیٹس، انسٹیٹیوٹ آف اکنامکس ترکمانستان کے درمیان مفاہمت کی یادداشت پر دستخط ہوئے ۔

کامسیٹس کے ریکٹر اور ترکمانستان کے انسٹیٹیوٹ آف اکنامکس کے ریکٹر نے معاہدے پر دستخط کئے۔ ترکمانستان کے پالیسی سٹڈیز ڈیپارٹمنٹ ادارہ بین الاقوامی تعلقات کامسیٹس میں سمجھوتے پر دستخط ہوئے۔ معاہدے پر کامسیٹس کے ریکٹر جنید زیدی اور ترکمانستان کی وزارت خارجہ کے حکام نے دستخط کئے۔ دونوں ملکوں کے درمیان اعلیٰ تعلیم کے شعبے میں تعاون کی یادداشت پر بھی دستخط ہوئے ، نمل یونیورسٹی کے ریکٹر ضیاء الدین نجم اور ترکمانستان کے سرکاری یونیورسٹی کے ریکٹر نے دستخط کئے۔

پاکستان کے ادارہ برائے امن و ترقی اور ترکمانستان کی انٹرنیشنل یونیورسٹی میں بھی سمجھوتہ طے پا گیا، جس کے تحت دونوں ممالک امن و ترقی کے فروغ کیلئے تعلیم کے شعبے میں تعاون بڑھائیں گے۔ ادارہ برائے امن و ترقی کی صدر فرحت آصف اور ترکمانستان یونیورسٹی کے ریکٹر نے معاہدے پر دستخط کئے، دونوں ممالک کے درمیان توانائی کے شعبے میں تعاون کا معاہدہ بھی طے پا گیا۔

بعد ازاں مشترکہ نیوز کانفرنس سے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

16/03/2016 - 19:32:26 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان