بھارت ،بیف کھانے کے شبے میں کشمیری طلباء پر ہندو انتہا پسندوں کا حملہ ،4 گرفتار
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ مارچ

بھارت ،بیف کھانے کے شبے میں کشمیری طلباء پر ہندو انتہا پسندوں کا حملہ ،4 گرفتار

سرینگر (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔16 مارچ۔2016ء)بھارتی ریاست راجستھان کے شہر چتورگڑھ میں میور یونیورسٹی میں زیر تعلیم کشمیری طلباء پر ہندو انتہا پسندوں نے بیف کھانے کا الزام لگاکر ان پر حملہ کردیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق میور یونیورسٹی سے کشمیری طلباء نے سرینگر میں ایک خبر رساں ایجنسی سے ٹیلیفون پرباتیں کرتے ہوئے کہاکہ ہندو انتہا پسند تنظیموں سے وابستہ کچھ طلباء نے ان کے کمروں اور سامان کی توڑ پھوڑ کی اور ان پر پتھراؤ کیا۔

طلباء کا کہنا ہے کہ اس کے بعد مقامی پولیس ہوسٹل میں آئی تو انہوں نے حملہ آوروں کے خلاف کاروائی کرنے کے بجائے چار کشمیری طلباء شکیب حفیظ، شوکت علی بٹ، محمد مقبول او ہلال فاروقی کو گرفتار کرلیا۔ یونیورسٹی کے انچارج طارق صوفی نے کہا کہ واقعہ اس وقت پیش آیاجب مقامی لوگوں کے ایک گروپ کو

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

16/03/2016 - 14:52:17 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان