کم عمر نوجوانوں میں دنیا میں سب سے زیادہ سگریٹ نوش فرانسی اور کینیڈین نوجوان ہیں
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ مارچ

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 16/03/2016 - 15:28:13 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 15:19:25 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 15:19:25 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 15:19:25 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:50:32 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:46:32 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:46:31 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:46:31 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:40:31 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:20:58 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:20:58
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کم عمر نوجوانوں میں دنیا میں سب سے زیادہ سگریٹ نوش فرانسی اور کینیڈین نوجوان ہیں

پیرس ۔ 16 مارچ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔16 مارچ۔2016ء) فرانس اور کینیڈا میں کم عمر نوجوان دنیا میں سب سے زیادہ سگریٹ نوشی کرتے ہیں۔عالمی ادارہ صحت نے دنیا کے42 ممالک میں ایک سروے کروایا ہے، جس کا مقصد یہ معلوم کرنا تھا کہ کس ملک کے کم عمر نوجوان سب سے زیادہ سگریٹ نوشی کرتے ہیں۔ اقوام متحدہ کی اس ایجنسی کے مطابق ان ممالک میں سر فہرست فرانس اور کینیڈا ہیں۔

اس رپورٹ کے مطابق اگر ”گانجا“ کے حوالے سے قوانین کی بات کی جائے تو فرانس یورپ کے متعدد ممالک سے پیچھے ہے، جو کہ حیران کن بات ہے۔ رپورٹ کے مطابق ایمسٹرڈیم کے تمام کیفیز میں ان منشتیات کے استعمال کی اجازت ہے اور اسپین کے پرائیویٹ کلبوں میں بھی لیکن اس کے باوجود نہ تو ہالینڈ اور نہ ہی اسپین ان چوٹی کے آٹھ ملکوں میں شمار ہوتے ہیں، جن میں گزشتہ ایک ماہ کے دوران نوجوانوں نے اس ڈرگ کا استعمال کیا ہو۔

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن نے اس تازہ رپورٹ کی کے تیاری میں وہ اعداد و شمار شامل کیے ہیں، جو سن 2014 میں اکٹھے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

16/03/2016 - 14:46:32 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان