صدارتی انتخابی مہم میں ہم نے خواتین اور اقلیتوں کے حوالے سے فحش اور متنازع بیانات ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ مارچ

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:46:32 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:46:31 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:46:31 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:40:31 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:20:58 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:20:58 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:20:58 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:18:21 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:18:21 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:18:20 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 14:14:54
پچھلی خبریں - مزید خبریں

صدارتی انتخابی مہم میں ہم نے خواتین اور اقلیتوں کے حوالے سے فحش اور متنازع بیانات سنے ہیں‘صدارتی انتخاب کیلئے جاری مہم میں فحش اور متنازع بیان بیازی’ غیر ضروری ہے ‘اس طرح میرے دورِ صدارت کے دوران حاصل ہونے والے ‘فوائد’ خطرے میں پڑ جائیں گے امریکہ کی ساکھ بھی متاثر ہوگی

امریکی صدر براک اوباما کی قانون سازوں کے ایک گروپ سے بات چیت

واشنگٹن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔16 مارچ۔2016ء) امریکی صدر براک اوباما نے خبردار کیا ہے کہ ملک میں جاری حالیہ صدارتی مہم سے بیرون ملک امریکا کی ساکھ کو نقصان پہنچا ہے۔خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق قانون سازوں کے ایک گروپ سے بات کرتے ہوئے صدر اوباما نے صدارتی انتخاب کے لیے جاری ‘سخت’ مہم کو ‘فحش اور متنازع بیان بیازی’ قرار دیا اور کہا کہ اس طرح نہ صرف اْن کے دورِ صدارت کے دوران حاصل ہونے والے ‘فوائد’ خطرے میں پڑ جائیں گے بلکہ اس سے امریکا کی ساکھ بھی متاثر ہوگی.براک اوباما کا کہنا تھا ہم نے خواتین اور اقلیتوں کے حوالے سے فحش اور متنازع بیانات سنے ہیں۔

براک اوباما نے ریپبلکن پارٹی کے صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ کی مہم اور متنازع بیانات کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا، ‘ہم (امریکی) جو کچھ کہتے ہیں اور جو کچھ کرتے ہیں، دنیا اْس پر توجہ دیتی ہے۔واضح رہے کہ براک اوباما نے اْس وقت امریکا کی باگ دوڑ سنبھالی جب عراق جنگ کی وجہ سے امریکا کو تنقید کا نشانہ بنایا جارہا تھا جبکہ سابق صدر جارج ڈبلیو بش کو بھی پوری دنیا میں ناپسند کیا جارہا تھا۔



اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

16/03/2016 - 14:20:58 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان