شراپووا ممنوعہ ادویات ٹیسٹ میں ناکام ہونے پر خیر سگالی سفیر کے عہدے سے معطل
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ مارچ

مزید کھیلوں کی خبریں

وقت اشاعت: 16/03/2016 - 13:45:59 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 13:45:56 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 13:22:49 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 13:12:14 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 13:12:09 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 13:12:06 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 13:11:01 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 13:10:58 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 13:09:53 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 13:09:50 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 13:09:47
پچھلی خبریں - مزید خبریں

شراپووا ممنوعہ ادویات ٹیسٹ میں ناکام ہونے پر خیر سگالی سفیر کے عہدے سے معطل

نیویارک (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔16 مارچ۔2016ء)اقوام متحدہ نے ٹینس سٹار ماریہ شیراپووا کو ممنوعہ ادویات کے ٹیسٹ میں ناکام ہونے کے بعد خیر سگالی کے سفیر کے عہدے سے معطل کر دیا ہے۔روس سے تعلق رکھنے والی 28 سالہ ماریہ شیراپووا کا جنوری میں میلڈونیم نامی دوا کا ٹیسٹ مثبت آیا تھا جس کے بعد انھیں 12 مارچ سے عارضی طور پر معطل کر دیا گیا ۔اقوام متحدہ کے ڈیویلپمنٹ پروگرام کے ترجمان کے مطابق ماریہ شیراپووا کو کسی بھی منصوبہ بندی کے تحت سرگرمیوں سے تحقیقات مکمل ہونے تک معطل کر دیا گیا ہے۔

یو این ڈی پی کے ترجمان نے کہا کہ شیراپووا اس عہدے پر 2007 سے فائز تھیں اور ہم ہمارے کام میں ان مدد کے شکرگزار ہیں۔سابق نمبر ایک ماریہ شیراپووا کے مطابق وہ طبی وجوہات کی وجہ سے گذشتہ دس سالوں سے میلڈونیم نامی دواکا استعمال کر رہیں تھیں۔پانچ بار گرینڈ سلیم کی فاتح نے کہا کہ وہ گذشتہ دس برسوں سے یہ دوا بعض طبی وجوہات کے سبب لے رہی تھیں اور اس دوا کو ورلڈ اینٹی ڈوپنگ ایجنسی (واڈا) نے یکم جنوری سے ممنوعہ ادویات کی فہرست میں شامل کیا ‘کھیلوں کا سامان بنانے والی کمپنی نائیکی، سوئس گھڑی ساز کمپنی ٹیگ ہیور اور گاڑیاں بنانے والی کمپنی پورشے پہلے ہی ماریہ شیراپووا کے ساتھ اپنے معاہدے معطل کر چکی ہیں۔

16/03/2016 - 13:12:06 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان