ثمینہ خاور حیات جعلی ڈگری کیس:
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:36:35 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:36:33 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:33:46 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:32:23 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:32:23 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:32:23 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:28:53 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:14:54 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:14:54 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:12:15 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:12:14
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

ثمینہ خاور حیات جعلی ڈگری کیس:

مقدمہ عدم پیروی پر خارج کئے جانے پر چیف جسٹس انور ظہیر جمالی اور جسٹس (ر)طارق محمود کے درمیان گرما گرمی،جسٹس ثاقب نثار کی مداخلت پر معاملہ حل ہوگیا

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔16 مارچ۔2016ء) سپریم کورٹ میں ثمینہ خاور حیات سے جعلی ڈگری کیس میں چیف جسٹس انور ظہیر جمالی اور جسٹس(ر) طارق محمود کے درمیان مقدمہ عدم پیروی پر خارج کئے جانے پر گرما گرمی ، جسٹس میاں ثاقب نثار کی مداخلت پر معاملہ حل ہو گیا۔ چیف جسٹس نے کہاکہ آپ کو بلایا آپ موجود نہ تھے مقدمہ خارج کر دیا ۔ آپ بحالی کی درخواست دے سکتے ہیں یہ اصول کی بات ہے جب ہم دوسرے بنچوں میں ہوتے تھے تو وہاں آپ کہتے تھے کہ میں بنچ نمبر ایک میں مصروف ہوں اور اب ہم بنچ نمبر ایک میں ہیں تو آپ پھر دوسرے بنچ میں چلے گئے ۔

ہم بار بار کہہ رہے ہیں کہ آپ بیٹھ جائیں جبکہ طارق محمود نے کہا کہ ان کی کتابیں موجود تھیں وہ دو نمبر عدالت میں گئے تھے ان جیسے لنگڑے کے لئے کورٹ نمبر دو سے یہاں آنے پر کچھ وقت تو لگے گا ۔ یہ آپ کا نہیں بار کا قصور ہے کیونکہ آپ کا پتہ ہی چلتا کہ آپ نے ریگولیر مقدمات پہلے سننے ہیں یا سپلمنٹری ۔ جنرل مشرف کا کیس سیریل نمبر ایک پر لگا ہوا تھا میرا خیال تھا کہ آپ پہلے وہی مقدمہ سنیں

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

16/03/2016 - 12:32:23 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان