لاہور ہائیکورٹ نے چیئرمین ایچ ای سی تقرری پر وفاقی حکومت سے 15 روز میں جواب طلب ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:14:54 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:12:15 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:12:14 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:12:14 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:09:46 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:07:46 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:07:46 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:07:46 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:03:02 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:03:02 وقت اشاعت: 16/03/2016 - 12:03:02
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

لاہور ہائیکورٹ نے چیئرمین ایچ ای سی تقرری پر وفاقی حکومت سے 15 روز میں جواب طلب کر لیا

لاہور(ا ردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین-انٹرنیشنل پریس ایجنسی۔16مارچ۔2016ء)لاہور ہائیکورٹ نے مختار احمد کی بطور چیئرمین ایچ ای سی تقرری کےخلاف دائردرخواست پر وفاقی حکومت اور اسٹیبلشمنٹ سیکرٹری سے 15 روز میں جواب طلب کر لیا۔ لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شاہد وحید نے کیس کی سماعت شروع کی تو عدالت کے رو برو درخواست گزار منیر احمد کے وکیل اظہر صدیق نے موقف اختیار کیا کہ وفاقی حکومت نے میرٹ سے ہٹ کر مختار احمد کی تعیناتی کی جب کہ اس عہدہ کے لیے نہ تو اخبار اشتہار جاری کیا گیا اور نہ ہی قواعد و ضوابط کے تقاضے پورے کیے گئے جبکہ مختار چئیرمین ایچ ای سی کے عہدے کے اہل بھی نہیں ہیں۔

درخواست گزار کے وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ مختار احمد کی بطور چئیرمین ایچ ای سی تقرری کلعدم قرار دے۔ عدالت نے وفاقی حکومت اور سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ سے 15روز میں جواب طلب کر لی۔

16/03/2016 - 12:07:46 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان