آم کے نئے باغات لگانے کا کام مارچ کے آخر تک مکمل کر لیا جائے،محکمہ زراعت پنجاب ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل مارچ

مزید قومی خبریں

وقت اشاعت: 15/03/2016 - 20:21:05 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 20:21:05 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 20:19:07 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 20:19:07 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 20:19:06 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 20:16:15 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 20:16:15 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 20:14:23 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 20:14:23 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 20:14:23 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 20:12:42
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

آم کے نئے باغات لگانے کا کام مارچ کے آخر تک مکمل کر لیا جائے،محکمہ زراعت پنجاب

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔15 مارچ۔2016ء)محکمہ زراعت پنجاب کے ترجمان نے باغبانوں کو سفارش کی ہے کہ وہ آم کے نئے باغات لگانے کا کام مارچ کے آخر تک مکمل کر لیں اور نئے پودوں کی داغبیل کرتے وقت آم کی مختلف اقسام کو مد نظر رکھیں۔ مالدہ،لنگڑا،سندھڑی،ثمر بہشت چونسہ اور فجری بڑے قد والی اقسام جبکہ دوسہری،انور رٹول،رٹول نمبر12اور سفید چونسہ چھوٹے قد والی اقسام ہیں۔

بڑے قد والی اقسام کی داغ بیل کے لیے قطاروں کا درمیانی فاصلہ 35 فٹ جبکہ پودوں کا درمیانی فاصلہ 30 فٹ رکھیں۔چھوٹے قد والی اقسام کی داغ بیل میں قطاروں کا درمیانی فاصلہ 30فٹ جبکہ پودے سے پودے کا فاصلہ 25 فٹ رکھیں۔ترجمان نے بتایا کہ آم کے باغات لگانے کیلئے نرسری سے صحت مند پودوں کا انتخاب کریں۔ 1.0تا1.3میٹر اونچائی اور 3سال تک کی عمر کے پودے زیادہ موزوں ہیں۔



اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

15/03/2016 - 20:16:15 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان