داعش کا خواتین کو زبردستی مانع حمل ادویات دینے کا انکشاف
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل مارچ

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 15/03/2016 - 20:03:58 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 20:03:58 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 19:56:16 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 19:54:14 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 19:47:15 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 19:44:21 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 19:38:08 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 19:38:08 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 18:52:10 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 18:52:10 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 18:52:10
پچھلی خبریں - مزید خبریں

داعش کا خواتین کو زبردستی مانع حمل ادویات دینے کا انکشاف

مکروہ حربے کا مقصد خواتین کو حاملہ ہونے سے روکنا ہے، 37خواتین داعش کے چنگل سے فرارہوگئیں،امریکی اخبار

نیویارک(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔15 مارچ۔2016ء)عالمی ذرائع ابلاغ نے انکشاف کیا ہے کہ عراق اور شام میں سرگرم دہشت گرد تنظیم دولت اسلامی’داعش‘ کے جنگجو اپنے ہاں یرغمالی بنائی گئی خواتین کو زبردستی مانع حمل ادویات دیتے رہے ہیں تاکہ جنگجوؤں کے ان کے ساتھ جنسی تعلقات کے نتیجے میں وہ حاملہ نہ ہو سکیں۔امریکی اخبارنے اپنی تازہ رپورٹ میں انکشاف کیا کہ داعشی جنگجو شمالی عراق میں یزیدی قبیلے کی یرغمال بنائی گئی خواتین کو جبرا مانع حمل ادویات کے استعمال پر مجبور کرتے رہے ہیں۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ داعش کے چنگل سے قریبا 37 خواتین فرارمیں کامیاب ہوئیں۔ ان سب نے بتایا کہ دوران حراست انہیں مانع حمل گولیاں کھلائی جاتیں یا انہیں مانع حمل ٹیکے لگائے جاتے رہے ہیں۔اخباری رپورٹ کے مطابق داعشی جنگجو لونڈی بنائی گئی خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کرتے۔ حاملہ ہونے والی خواتین کے حمل ضائع کرا دیے جاتے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

15/03/2016 - 19:44:21 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان