قومی اسمبلی میں خواتین ارکان کا ایم این ایز کی ترقیاتی سکیموں میں حصہ نہ ملنے کے ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 15/03/2016 - 18:47:44 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 18:47:44 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 18:47:44 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 18:44:26 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 18:44:26 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 18:44:25 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 18:38:49 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 18:37:26 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 18:37:26 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 18:17:46 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 18:17:43
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

قومی اسمبلی میں خواتین ارکان کا ایم این ایز کی ترقیاتی سکیموں میں حصہ نہ ملنے کے خلاف احتجاج ،ایوان سے واک آؤٹ

چوہدری برجیس طاہر او ر رانا افضل ک جانب سے منانے کی کوششیں رائیگاں، خواتین ارکان ایوان میں واپس نہ آئیں , حکومت کاشتکاروں کو سبسڈی دے ،بھارت سے زرعی اجناس منگوانے پر پابندی عائد کی جائے ، مولانا امیر زمان اور دیگر کا نکتہ اعتراض پر اظہار خیال

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔15 مارچ۔2016ء) قومی اسمبلی میں خواتین ارکان کا ایم این ایز کی ترقیاتی سکیموں میں حصہ نہ ملنے کے خلاف منگل کو احتجاج کے بعد ایوان سے واک آؤٹ، جماعت اسلامی کی رکن اسمبلی عائشہ سید نے نکتہ اعتراض پر ایوان کی توجہ خواتین ارکان کو ترقیاتی فنڈز نہ ملنے کی جانب مبذول کرائی اور تمام خواتین ارکان سے احتجاجاً واک آؤٹ کرنے کی درخواست کی، حکومتی بنچوں پر موجود خواتین ارکان کے علاوہ دیگر تمام جماعتوں کی خواتین ارکان نے واک آؤٹ میں حصہ لیا، ڈپٹی سپیکر مرتضی جاوید عباسی نے وفاقی وزیر امور کشمیر چوہدری برجیس طاہر اور پارلیمانی سیکرٹری برائے خزانہ رانا محمد افضل کو خواتین ارکان کو منانے کیلئے بھیجا مگر وہ ایوان میں واپس نہ آئیں۔

منگل کو عائشہ سید سمیت طاہرہ اورنگزیب ، شیر اکبر خان، مولانا امیر زمان، نواب یوسف تالپور، شیخ صلاح الدین اور ڈاکٹر اطہر جدون نے بھی نکتہ اعتراض پر اہم قومی ایشوزاور حلقوں کے مسائل پر ایوان کی توجہ مبذول کرائی۔عائشہ سید نے کہا کہ مالاکنڈ ڈویژن میں پٹرول 62روپے کی بجائے 66 روپے فی لیٹر فروخت ہو رہا ہے، خواتین ارکان کو ترقیاتی فنڈز دیئے جائیں کیونکہ خواتین ایوان کا 80 فیصد

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

15/03/2016 - 18:44:25 :وقت اشاعت