دس لاکھ تاجروں کو ٹیکس نیٹ میں لانے کی حکومتی ایمنسٹی سکیم ناکام
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
منگل مارچ

مزید تجارتی خبریں

وقت اشاعت: 15/03/2016 - 13:42:37 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 13:42:35 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 13:40:33 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 13:36:59 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 12:50:52 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 12:42:44 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 12:34:03 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 12:32:08 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 11:33:20 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 11:33:18 وقت اشاعت: 15/03/2016 - 11:33:16
پچھلی خبریں -

اسلام آباد

دس لاکھ تاجروں کو ٹیکس نیٹ میں لانے کی حکومتی ایمنسٹی سکیم ناکام

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔15 مارچ۔2016ء)10 لاکھ تاجروں کو ٹیکس نیٹ میں لانے کی ٹیکس ایمنسٹی اسکیم مکمل ناکام ہوگئی۔ 28 لاکھ تاجروں میں سے صرف تین ہزار نو سو انتالیس تاجروں نے ایک فیصد ٹیکس دے کر 38 ارب روپے کا کالا دھن سفید کرالیا۔تفصیلات کیمطابق ایف بی آر چھوٹے تاجروں کو ٹیکس نیٹ میں لانے میں ناکام ہوگیا، حکومت کی جانب سے یکم فروری کو شروع کی جانیوالی ٹیکس ایمنسٹی اسکیم جسے ٹیکس رضاکارانہ ادائیگی اسکیم کا نام دیا جارہا تھا، 15مارچ کو مکمل طور پر ناکام ہوگئی ہے۔

ٹیکس ایمنسٹی اسکیم کے آغاز پر حکومت نے دس لاکھ چھوٹے تاجروں کو ٹیکس نیٹ میں لانے کا دعویٰ کیا تھا، جب کہ ایف بی آر نے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

15/03/2016 - 12:42:44 :وقت اشاعت