حزب اسلامی کا افغان حکومت کے ساتھ امن عمل میں شمولیت کا اعلان
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر مارچ

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 14/03/2016 - 21:11:40 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 20:56:57 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 20:44:23 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 20:44:23 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 20:40:45 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 20:40:45 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 20:40:44 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 20:26:51 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 20:26:51 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 20:24:24 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 19:55:30
پچھلی خبریں - مزید خبریں

حزب اسلامی کا افغان حکومت کے ساتھ امن عمل میں شمولیت کا اعلان

کابل(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔14 مارچ۔2016ء)افغانستان کے سابق وزیر اعظم اور حزب اسلامی کے سربراہ گلبدین حکمت یار نے حکومت کے ساتھ امن عمل میں شامل ہونے کا اعلان کر دیا۔افغان میڈیا کے مطابق حزب اسلامی کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ افغانستان میں امن کے قیام کے لئے اشرف غنی حکومت کے ساتھ مفاہمتی عمل کا حصہ بننے کے لئے تیار ہیں۔

دوسری جانب افغان طالبان نے مفاہمتی عمل کا حصہ بننے سے انکار کرتے ہوئے پہلے اپنے مطالبات پر مذاکرات کا مطالبہ کیا ہے۔حزب اسلامی نے امریکا کی جانب سے اپنے گروپ کے 2 رہنماؤں کے نام بین الاقوامی دہشت گردوں کی فہرست میں شامل کرنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ امریکا کی جانب سے یہ اقدام افغان مفاہمتی عمل کے اعلان کے بعد کیا گیا۔واضح رہے امریکی محکمہ خارجہ نے دو روز قبل ہی حزب اسلامی کے 2 رہنماؤں عبداﷲ نوبہار اور عبدالصبور کے نام بین الاقوامی دہشت گردوں کی فہرست میں شامل کئے تھے۔ امریکی محکمہ خارجہ نے حزب اسلامی کے دونوں رہنماؤں کو دھماکا خیز مواد بنانے کا ماہر قرار دیا ہے۔

14/03/2016 - 20:40:45 :وقت اشاعت