پاکستانی قانون پر عمل نہیں کرنا تو عما رتو ں پر داعش کا جھنڈا لگا دیا جائے،سپریم ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:36:53 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:36:53 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:36:53 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:31:46 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:30:26 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:30:26 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:30:26 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:27:53 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:27:16 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:23:13 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:22:49
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

پاکستانی قانون پر عمل نہیں کرنا تو عما رتو ں پر داعش کا جھنڈا لگا دیا جائے،سپریم کورٹ

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔14 مارچ۔2016ء)سپریم کورٹ نے اسلام آباد کے شہری علاقوں میں کمرشل سرگرمیوں اور سیکیورٹی کے نام پر رکاوٹوں کے مقدمے میں وزارت داخلہ کو آئی جی اسلام آباد اور موٹروے پولیس کے دفاتر دوسری جگہ منتقل کرنے کے لئے دو ہفتوں کی مہلت دے دی ہے۔ جبکہ ضلعی عدالتی کی جگہ پر کام کرنے والی اسلام آباد ہائیکورٹ کو بھی دوسری جگہ منتقل نہ ہونے پر عدالت عالیہ سے ان کے رجسٹرار کے ذریعے جواب طلب کیا ہے جبکہ چیئرمین سی ڈی اے کو حکم دیا ہے کہ چار سو نجی تعلیمی اداروں کی منتقلی کے حوالے سے جامعہ پلان اور ایف آئی اے ہیڈ کوارٹر کی منتقلی بارے جواب 11 اپریل تک عدالت میں پیش کریں۔

دو رکنی بنچ کے سربراہ جسٹس شیخ عظمت سعید نے سیکرٹری داخلہ کی جانب سے آئی جیز کے دفاتر خالی کرنے کیلئے دو سے تین ماہ کی مہلت طلب کرنے پر ریما رکس دیئے ہیں کہ کیا آئی جیز کے دفاتر پر قانون کا اطلاق نہیں ہوتا اگر دفاتر پر پاکستان کا جھنڈا لگا ہے تو پاکستانی قانون پر عمل کرنا ہوگا اور اگر پاکستانی قانون پر عمل نہیں کرنا تو بہتر ہے داعش کا جھنڈا لگا دیا جائے چیئرمین سی ڈی اے کام نہیں کرسکتے توبتا دیں عدالت کے ساتھ مذاق کیاجارہا ہے بتایا جائے کیا سیکٹر سیون اور ایٹ اسلام آباد کا حصہ نہیں ہیں انہوں نے یہ ریمارکس پیر کے روز دیئے ہیں اس دوران جب سماعت شروع ہوئی تو سیکرٹری داخلہ سیکرٹری کیڈ ، سیکرٹری مواصلات اور دیگر حکام پیش ہوئے سیکرٹری داخلہ نے عدالت کو بتایا کہ آئی جیز کے دفاتر خالی کرنے میں دو سے تین ماہ کا عرصہ لگ جائے گا اس کیلئے مہلت دی جائے اس پر عدالت نے سیکرٹری داخلہ اور سکریرٹی خارجہ کی سرزنش کی اگر آپ نے دفاتر کیلئے جگہ ڈھونڈنی ہوتی تو اور بات تھی حد ہوگئی ایک ماہ میں آپ دفاتر کی جگہ ہی نہیں ڈھونڈ سکے اگر یہ بات ہے تو جو دفاتر بند کئے ہیں پھر ان کو بھی کھلوا دیتے ہیں چیئرمین سی ڈی اے کو بیان حلفی دینا ہوگا کہ جو یہ مدت چاہتے ہیں اس مدت میں دفاتر خالی کردیئے جائینگے یہ نہیں ہوسکتا کہ باقی

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

14/03/2016 - 14:30:26 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان