جواہر لال نہرویونیورسٹی کے تین پروفیسرز نے کشمیر ،منی پوراور ناگا لینڈ پر بھارتی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:31:46 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:30:26 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:30:26 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:30:26 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:27:53 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:27:16 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:23:13 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:22:49 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:22:49 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:22:48 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:15:20
پچھلی خبریں - مزید خبریں

جواہر لال نہرویونیورسٹی کے تین پروفیسرز نے کشمیر ،منی پوراور ناگا لینڈ پر بھارتی قبضے کوغیر قانونی قرار دے دیا

سرینگر ۔ 14 مارچ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔14 مارچ۔2016ء) جواہر لال نہرو یونیورسٹی نئی دلی طلباء یونین کے صدر کنہیا کمارکی آزادی کے بارے میں سوچ کی یونیورسٹی کے تین پروفیسروں نے توثیق کی ہے۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق میڈیا اطلاعات میں کہاگیا ہے کہ کشمیری پروفیسرہیپی مون جیکب کے علاوہ نیویدیتامیمن اور تانیکا سرکار نے کہاہے کہ بھارت نے غیر قانونی طورپر جموں وکشمیر پر قبضہ کر رکھا ہے ۔

انہوں نے کہاکہ بھارتی حکومت نے منی پوراور ناگا لینڈ پر بھی جبری طورپرقبضہ کر رکھا ہے اور بھارت نے ملک کی سرحدوں پر تعینات فوج کا تیس فیصد ان علاقوں میں تعینات کر

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

14/03/2016 - 14:27:16 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان