سپریم کورٹ نے وفاقی پولیس اور موٹروے پولیس کے آئی جیز کو دفاتر منتقلی کیلئے دو ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:15:20 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:13:14 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:13:14 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:13:14 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:11:51 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:11:51 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:05:41 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:03:11 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 14:00:59 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 13:59:05 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 13:57:37
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

سپریم کورٹ نے وفاقی پولیس اور موٹروے پولیس کے آئی جیز کو دفاتر منتقلی کیلئے دو سے تین ماہ کا وقت دینے کی استدعا مسترد کردی

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔14 مارچ۔2016ء)سپریم کورٹ آف پاکستان نے وفاقی پولیس اور موٹروے پولیس کے آئی جیز کو دفاتر منتقلی کیلئے دو سے تین ماہ کا وقت دینے کی استدعا مسترد کر تے ہوئے کہاہے کہ ای الیون کچی آبادی فورا گرا دی گئی وہاں کے مکینوں کو تو مہلت نہیں دی گئی ‘ اسلام آباد اور موٹروے پولیس کے سربراہان قانون سے بالاتر ہیں تو اپنے دفاتر میں قومی پرچم کی جگہ داعش کا جھنڈا لگا لیں۔

پیر کو سپریم کورٹ میں جسٹس شیخ عظمت سعید کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے اسلام آباد کے رہائشی علاقوں میں کمرشل اور سرکاری سرگرمیوں کیخلاف کیس کی سماعت کی ۔ سیکرٹری داخلہ ، سیکرٹری مواصلات اور چیرمین سی ڈی اے عدالت میں پیش ہوئے۔سماعت کے دور ان عدالتی استفسار پر سیکرٹری داخلہ نے بتایا کہ آئی جی اسلام آباد پولیس کا دفتر ایف 7 اور آئی جی موٹروے کا دفتر ایف 8 میں ہے ‘دونوں آئی جیز کے دفاتر رہائشی علاقوں سے منتقل کرنے کیلئے دو سے تین ماہ کا وقت چاہیے ۔

نجی ٹی وی کے مطابق جسٹس شیخ عظمت

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

14/03/2016 - 14:11:51 :وقت اشاعت