لاہور ہائیکورٹ نے مصطفی کمال کے الزامات کی حقیقت کو منظر عام پر لانے اور جوڈیشل ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
پیر مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 14/03/2016 - 13:15:29 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 13:07:29 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 12:47:13 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 12:47:06 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 12:42:51 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 12:39:57 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 12:39:57 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 12:39:54 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 12:39:54 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 12:39:54 وقت اشاعت: 14/03/2016 - 12:29:37
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

لاہور ہائیکورٹ نے مصطفی کمال کے الزامات کی حقیقت کو منظر عام پر لانے اور جوڈیشل کمیشن کے قیام کے لئے دائر درخواست کی سماعت سترہ مارچ تک ملتوی کرتے ہوئے درخواست گزار کو پٹیشن کے ہمراہ اخباری تراشے منسلک کرنے کی اجازت دے دی۔

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔14 مارچ۔2016ء) لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شاہد وحید نے کیس کی سماعت کی۔درخواستگزار بیرسٹر علی گیلانی نے عدالت میں موقف اختیار کیاکہ ایم کیو ایم کے قائد کے خلاف پارٹی کے باغی ہونے والے رہنماوں نے سنگین نوعیت کے الزامات عائد کئے ہیں لہذا حقائق تک پہنچنے کے لئے جوڈیشل کمیشن تشکیل دیاجائے. انہوں نے کہاکہ ایم کیوایم کے قائد پر الزامات لگانے والے بھی شریک ملزم ہیں۔

مصطفی کمال کے بیانات اور الزامات اعتراف جرم کے زمرے میں آتے ہیں۔انہوں نے عدالت سے استدعاکی کہ تمام الزامات کی تحقیقات کے لیے جوڈیشل کمیشن تشکیل دیا جائے اور جوڈیشل کمیشن کےفیصلہ تک مصطفی کمال سمیت ایم کیوایم کے موجودہ اورسابق رہنماوں کانام ای سی ایل میں شامل کیا جائے۔جس پر عدالت نے دائر درخواست کی سماعت سترہ مارچ تک ملتوی کرتے ہوئے درخواست گزار کو پٹیشن کے ہمراہ اخباری تراشے منسلک کرنے کی اجازت دے دی۔

14/03/2016 - 12:39:57 :وقت اشاعت