وزیراعلی پنجاب نے تحفظ نسواں ایکٹ سے متعلق علماء کا موقف جاننے کیلئے کمیٹی تشکیل ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
اتوار مارچ

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 13/03/2016 - 22:10:02 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 22:09:01 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 22:09:01 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 22:07:13 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 22:07:13 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 22:07:13 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 21:27:11 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 21:27:11 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 21:27:11 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 20:54:46 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 20:54:46
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

وزیراعلی پنجاب نے تحفظ نسواں ایکٹ سے متعلق علماء کا موقف جاننے کیلئے کمیٹی تشکیل دے دی،رانا ثناء اللہ کمیٹی کے چےئرمین،خواجہ احمد حسان شریک چےئرمین اور سلمان صوفی سیکرٹری ہوں گے

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13مارچ۔2016ء)وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے پنجاب پروٹیکشن آف وویمن اگینسٹ وائیلنس ایکٹ2016ء سے متعلق علماء کرام کا موقف جاننے کے لئے کمیٹی تشکیل دے دی۔صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ کمیٹی کے چےئرمین،خواجہ احمد حسان شریک چےئرمین اور سینئرممبر سپیشل مانیٹرنگ یونٹ امن وامان سلمان صوفی سیکرٹری ہوں گے۔

کمیٹی میں متعلقہ سیکرٹریز کے علاوہ تمام مکاتب فکر کے علمائے کرام اورمشائخ عظام بھی شامل ہیں۔یہ بات سینئر ممبر سپیشل مانیٹرنگ یونٹ امن و امان سلمان صوفی نے بتائی۔ انہوں نے کہا کہ خواتین کے خلاف تشدد کو روکنے کے لئے بنائے گئے ایکٹ کو مزیدمضبوط کیا جائے گا۔ انہوں نے مزید کہا کہ خواتین پر تشدد کرنے کی ہرگز اجازت نہیں دی جائے گی اور ان کے حقوق کا تحفظ ریاست کی ذمہ داری ہے ۔

سلمان صوفی نے کہا کہ یہ قانون رات کے اندھیرے میں نہیں بلکہ پنجاب کے تمام منتخب عوامی نمائندوں کی معاونت سے دو سال کی محنت کے بعد بنایا گیا ہے اورپاکستان کو ترقی کی منازل طے کرنے کے لئے معاشرے

مکمل خبر پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

13/03/2016 - 22:07:13 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان