افغان طالبان نے سینئر رہنما مولوی محمد ولی حقانی کی 10 ساتھیوں کے ہمراہ ہلاکت کی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
اتوار مارچ

مزید بین الاقوامی خبریں

وقت اشاعت: 13/03/2016 - 19:55:18 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 19:55:18 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 18:58:19 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 18:58:18 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 18:58:18 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 18:57:19 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 18:57:19 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 17:07:40 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 17:07:40 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 17:06:18 وقت اشاعت: 13/03/2016 - 17:06:18
پچھلی خبریں - مزید خبریں

افغان طالبان نے سینئر رہنما مولوی محمد ولی حقانی کی 10 ساتھیوں کے ہمراہ ہلاکت کی تصدیق کردی ، سیکورٹی فورسز کی زمینی اور فضائی کاروائیوں میں کمانڈر سمیت 26 شدت پسند ہلاک ، متعدد زخمی،بم دھماکے اور فائرنگ کے واقعے میں بچے سمیت 3 افراد مارے گئے، 3بچے زخمی

کابل(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13مارچ۔2016ء)افغان طالبان نے مشرقی صوبہ ننگرہار میں گروپ کے سینئر رہنما مولوی محمد ولی حقانی کی 10 ساتھیوں کے ہمراہ ہلاکت کی تصدیق کردی جبکہ افغان نیشنل سیکورٹی فورسز کی زمینی اور فضائی کاروائیوں میں کمانڈر سمیت 26 شدت پسند ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے،بم دھماکے اور فائرنگ کے واقعے میں بچے سمیت 3 افراد ہلاک اور 3زخمی ہوگئے ۔

اتوار کو افغان میڈیا کے مطابق طالبان نے مشرقی صوبہ ننگرہار میں گروپ کے سینئر رہنما مولوی محمد ولی حقانی کی ہلاکت کی تصدیق کردی۔طالبان کی طرف سے جاری آن لائن بیان میں کہا گیا ہے کہ مولوی حقانی ضلع کوٹ میں شدید جھڑپ میں 10 ساتھیوں کے ہمراہ ہلاک ہوئے ۔مولوی حقانی نے فوجی آپریشن کی قیادت کرنے کیلئے ضلع کوٹ گئے تھے تاحال اس بات کی تصدیق نہیں ہوسکی کہ مولوی حقانی کے قافلے پر گھات لگا کر کس نے حملہ کیا تاہم ضلع کوٹ داعش کا مضبوط گڑھ بتایا جاتا ہے ۔

ادھر نیشنل سیکورٹی فورسز کی زمینی اور فضائی کاروائیوں میں کمانڈر سمیت 26 شدت پسند ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔وزارت دفاع کے بیان میں کہا گیا ہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں افغان سیکورٹی فورسز نے مختلف علاقوں میں زمین اور فضائی کاروائیاں کی ہیں جن میں 26 شدت پسند مارے گئے ۔بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ صوبہ ہرات کے ضلع شنداند میں زمینی اور فضائی کاروائیوں میں 12 شدت پسند ہلاک اور 7 دیگر زخمی ہوئے۔

6 شدت پسند صوبہ ہلمند کے ضلع ناد علی میں کلیئرنس آپریشن کے دوران مارے گئے۔صوبہ ارزگان کے ضلع چارچینو میں 6 شدت پسند ہلا ک ہوئے ۔وزارت دفاع کے مطابق افغان سیکورٹی فورسز نے آپریشن کے دوران دانڈے غوری اور دانڈے شہاب الدین میں طالبان کمانڈر کے گھر سے بڑی مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود قبضے میں لے لیا جبکہ عسکریت پسندوں کی 7 پناہ گاہوں کو تباہ کردیا گیا۔

کپیسا صوبے کے ضلع نجرب میں طالبان کمانڈر روحانی مارا گیا جبکہ اسکے دو ساتھی زخمی ہوگئے ۔ادھر ہلمند میں بم دھماکے میں ایک بچہ جاں بحق ہوگیا جبکہ تین زخمی ہوگئے ۔صوبائی گورنر کے ترجمان عمر زاک نے بتایا ہے کہ واقعہ ضلع خان ایشن میں پیش آیا جہاں سیکورٹی فورسز کو نشانہ بنانے کیلئے نصب بم پھٹنے سے بچے اسکی زد میں آگئے ۔قندھار صوبہ میں موٹرسائیکل سواروں کی فائرنگ سے 2شہری ہلاک اور ایک زخمی ہوگیا۔فریاب صوبہ میں نامعلوم افراد نے زنا کاری کے الزام میں جوان جوڑے کو قتل کردیا۔مقامی حکام کا کہنا ہے کہ واقعہ ضلع خواجہ صاحب پوش کے علاقے یانگی قلعہ میں پیش آیا۔

13/03/2016 - 18:57:19 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان