نیب ملک سے بدعنوانی کے خاتمے کیلئے زیرو ٹالرنس کی پالیسی پر عمل کر رہی ہے ، چییرمین ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 13/11/2015 - 18:42:05 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 18:40:34 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 18:40:34 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 18:24:16 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 18:21:30 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 18:21:30 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 18:20:30 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 18:20:30 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 18:20:30 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 18:08:12 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 18:08:12
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

نیب ملک سے بدعنوانی کے خاتمے کیلئے زیرو ٹالرنس کی پالیسی پر عمل کر رہی ہے ، چییرمین نیب

اسلام آباد ۔ 13 نومبر (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔13 نومبر۔2015ء) قومی احتساب بیورو (نیب) کے قائم مقام چیئرمین محمد امتیاز تاجور نے کہا ہے کہ نیب ملک سے بدعنوانی کے خاتمے کیلئے زیرو ٹالرنس کی پالیسی پر عمل اور تمام دستیاب وسائل کو بروئے کار لاتے ہوئے پرعزم ہے۔ یہ بات انہوں نے یو ایس ایڈ اور ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کے زیر اہتمام یو ایس ایڈ فنڈڈ پراجیکٹ میں دھوکہ دہی سے آگاہی اور بچاؤ کے عنوان سے مقامی ہوٹل میں منعقدہ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ نیب کو نیب آرڈیننس کے تحت بدعنوانی کی روک تھام کا قانونی اختیار دیا گیا ہے ، نیب بدعنوانی کے خاتمے اور اختیارات سے تجاوز کے خاتمے کیلئے موثر اقدامات کر رہا ہے، سرکاری اداروں میں پروکیورمنٹ کے نظام میں احتساب شفافیت اور رقم کا استعمال اہم عنصر ہیں۔ سرکاری اداروں میں پروکیورمنٹ پر بھاری رقم خرچ کی جاتی ہے جس سے غربت کے خاتمے کیلئے امداد کے موثر استعمال کو یقینی بنانے میں مدد ملے گی۔

اس مجموعی منصوبہ بندی سے ملک کی سماجی، سیاسی اور معاشی ترقی یقینی بنائی جا سکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کے بدعنوانی کے خاتمے کے کنونشن کے آرٹیکل 9 میں کہا گیا ہے کہ حکومت قانونی نظام کے بنیادی اصولوں کے مطابق فیصلہ سازی میں شفافیت اور مقابلے کے معروضی دائرہ کار کی بنیاد پر پروکیورمنٹ کا باقاعدہ نظام تشکیل دے۔ ان اقدامات سے بدعنوانی کی موثر طریقے سے روک تھام کی جا سکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

13/11/2015 - 18:21:30 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان