چترال کے بالائی علاقے شاہ گروم کے سیلاب متاثرین تاحال حکومتی امداد کے منتظر
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 13/11/2015 - 17:29:55 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 17:03:47 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 17:03:47 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 17:01:47 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 17:00:57 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 17:00:57 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 17:00:57 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 16:53:27 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 16:50:39 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 16:50:39 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 16:43:41
پچھلی خبریں - مزید خبریں

چترال

چترال کے بالائی علاقے شاہ گروم کے سیلاب متاثرین تاحال حکومتی امداد کے منتظر

چترال(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔13 نومبر۔2015ء) چترال کے انتہائی شمال میں بالائی علاقے شاہ گروم وادی کے مکین جولائی سے ستمبر تک سیلاب کی وجہ سے بر ی طرح متاثر ہوئے مگر ان لوگوں کا کہنا ہے کہ ان کے ساتھ کوئی حاص امداد نہیں ہوا۔علاقے کے سماجی کارکن عبد الصمد کا کہنا ہے کہ یہاں تین ماہ تک راستے بند رہے اور آشیائے خوردنوش کی شدید قلعت پڑگئی لوگوں کے پاس ایک کلو آٹا تک نہیں بچا۔

بجلی تو اس علاقے میں ابھی تک سرکار نے دیا ہی نہیں لوگ اپنے گندم کو پن چکی سے پیستے تھے مگر سیلاب کی وجہ سے ندی نالیاں بھی بہہ گئی جس کے نتیجے میں پانی سے چلنے والے یہ چکیاں بھی تباہ ہوئی۔ جبکہ علاقے میں ڈیزل کی رسد کی بندش سے ڈیزل انجن سے چلنے والے مشینی چکی بھی کام نہیں کرتی تھی اسلئے لوگ فاقہ کشی کے شکار ہوئے تھے۔ان کا کہنا ہے کہ زلزلے سے بھی یہاں نقصان ہوا ہے مگر حکومت نے ابھی تک سیلاب متاثرین کے ساتھ وہ امداد نہیں کیا جتنا کرنا چاہئے تھا۔

اس علاقے میں کئی سال پہلے سو میگا واٹ سے زیادہ پن بجلی گھر کا Feasibility رپورٹ تیار ہوا تھا مگر ابھی تک اس پر بھی عملی کام شروع نہیں ہوا اور اس جدید دور میں بھی یہاں کے لوگ اندھیروں میں زندگی گزار رہے ہیں۔

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

13/11/2015 - 17:00:57 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان