رحیم یار خان میں تلور کے علاج کا واحد مرکز شکار پر پابندی کی زد میں آ گیا
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعہ نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 13/11/2015 - 14:12:17 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 14:03:08 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 13:47:09 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 13:24:35 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 13:21:12 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 13:20:22 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 13:20:22 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 13:18:23 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 13:18:23 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 13:18:23 وقت اشاعت: 13/11/2015 - 13:16:12
پچھلی خبریں - مزید خبریں

رحیم یار خان

رحیم یار خان میں تلور کے علاج کا واحد مرکز شکار پر پابندی کی زد میں آ گیا

ڈاکٹرز بھی پریشانی کا شکار ، تلور کے علاج اور بحالی کا واحد مرکز بند کئے جانے کا امکان

رحیم یار خان (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔13 نومبر۔2015ء) رحیم یار خان میں تلور کے علاج اور بحالی کا واحد مرکز بھی پاکستان میں عرب بھائیوں پر شکار پر پابندی کی زد میں آ گیا۔ ملک کے اس واحد مرکز میں نایاب نسل کے پرندے کی دیکھ بحال اب کیسے ہوگی؟ اس کا جواب کسی کے پاس نہیں۔ویٹرنری ڈاکٹر بھی پریشان ، تلور کے شکار پر پابندی تلور بحالی کا پاکستان میں قائم واحد مرکز بھی بند ہونے کا خدشہ۔

رحیم یار خان سے 85 کلو میٹر دور ریت کے ٹیلوں میں واقع یہ مقام سلو والی کہلاتا ہے۔ عرب مہمانوں نے تلور کے شکار کے لیے یہاں کا رخ کیا تو علاقے میں سماجی سرگرمیوں کے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

13/11/2015 - 13:20:22 :وقت اشاعت