ملک میں مارشل لاء کا کوئی خطرہ نہیں ، حکومت اور عسکری قیادت ایک صفحے پر ہیں، دونوں ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 12/11/2015 - 23:17:47 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 23:16:48 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 23:16:48 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 23:15:37 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 23:15:37 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 23:14:34 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 23:14:34 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 23:12:40 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 23:12:39 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 23:12:39 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 23:11:09
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کراچی

ملک میں مارشل لاء کا کوئی خطرہ نہیں ، حکومت اور عسکری قیادت ایک صفحے پر ہیں، دونوں ملک سے دہشتگردی کے خاتمے کے لیے پرعزم ہیں،حکومت گڈ گورننس پر بھی توجہ دے رہی ہے،ججوں اور جرنیلوں نے ماضی کی غلطیوں سے سبق سیکھ لیا ہے ،عوام ہی ملک میں آئین اور جمہوریت کے محافظ ہیں

وفاقی وزیر منصوبہ بندی احسن اقبال کی پاک چین اقتصادی راہداری کے حوالے سے مشترکہ گروپ کے اجلاس کے بعد پریس کانفرنس

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔12 نومبر۔2015ء)وفاقی وزیر منصوبہ بندی و ترقی چوہدری احسن اقبال نے کہا ہے کہ سیاست دانوں ،ججوں اور جرنیلوں نے ماضی کی غلطیوں سے سبق سیکھ لیا ہے ۔عوام ہی ملک میں آئین اور جمہوریت کے محافظ ہیں ۔ملک میں مارشل لاء کا کوئی خطرہ نہیں ے،حکومت اور عسکری قیادت ایک صفحے پر ہیں اور دونوں ملک سے دہشت گردی کے خاتمے کے لیے پرعزم ہیں۔

حکومت گڈ گورننس پر بھی توجہ دے رہی ہے ۔تمام اداروں کو ملک کے مسائل حل کرنے کے لیے آئین کی حدود میں رہتے ہوئے کام کرنا ہوگا ۔پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ عالمی سطح پر پاکستان کی معاشی ترقی کی علامت ہے ۔دنیا جو 2013میں پاکستان کو ناکام ریاست قرار دینے کی باتیں کرتی تھی اب اسی دنیا کے ممالک پاکستان میں سرمایہ کاری کرنے کے لیے آرہے ہیں ۔

یہ پرامن حالات کی وجہ سے ممکن ہوا ہے ۔بلوچستان کے ناراض لوگ ہتھیار ڈالیں اور قومی دھارے میں آجائیں ۔یہی پرامن اور ترقی یافتہ بلوچستان کا مستقبل ہے ۔وہجمعرات کو کراچی پریس کلب میں پاک چین اقتصادی راہداری کے حوالے سے مشترکہ گروپ کے تین روزہ اجلاس کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے ۔اس موقع پر کراچی پریس کلب کے صدر فاضل جمیلی اور سیکرٹری اے ایچ خانزادہ بھی موجود تھے ۔

انہوں نے کہا کہ کراچی پریس کلب کی حکمران مسلم لیگ بڑی قرض دار ہے ۔آمر مشرف کے دور میں جب مسلم لیگ پر زمین تنگ کردی گئی تھی تو اسی پریس کلب نے ہمیں اپنی آواز عوام تک پہنچانے کے لیے آکیسجن فراہم کی تھی ۔پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کا پانچواں اجلاس 10سے 12نومبر تک کراچی میں جاری رہا ۔اس اجلاس میں چین کے صدر کے اپریل 2015میں پاکستان کے دورے کے موقع پر جن منصوبوں پر دستخط ہوئے تھے ان پر عملدرآمد کا جائزہ لیا گیا ۔

چینی حکومت نے ان منصوبوں کی تیز رفتاری پر اطمینان کا اظہار کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ گوادر میں فری زون کے لیے چین کو 2200ایکڑ میں سے 650ایکڑ زمین مہیا کردی گئی ہے ۔اس راہداری کا مرکزی نقطہ توانائی کا شعبہ ہے ۔1998میں ہم نے جو پلان بنایا تھا اس کے تحت 28000میگاواٹ بجلی 2015تک پیدا ہونی تھی لیکن آمر مشرف نے اس منصوبے کو 1999میں ختم کردیا ۔انہوں نے کہا کہ ماضی میں آج کا دن گذارو کل دیکھا جائے گا کی پالیسی کے تحت حکومتیں چلائی گئیں ۔

2013میں عالمی سطح پر پاکستان کو ناکام ریاست قرار دینے کی کوشش کی جارہی تھی ۔جب ہم نے 2013میں حکومت سنبھالی تو ستمبر 2013میں سیاسی جماعتوں کے اتفاق رائے سے کراچی میں آپریشن شروع کیا گیا ۔آج کا کراچی 2013کے کراچی سے بہتر ہے ۔پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے کی میٹنگ کراچی میں منعقد ہوئی ہے ،جو دنیا کے لیے پیغام ہے کہ کراچی اب پرامن شہر ہے ۔

کراچی ملک کا معاشی حب ہے ۔2013میں بلوچستان جنرل مشرف کی پالیسیوں کی وجہ سے ملک سے تقریباً الگ ہوچکا تھا لیکن حکومت نے ناراض بلوچ رہنماؤں سے مذاکرات کی پالیسی اختیار کی اور آج بلوچستان میں ہر جگہ پر پاکستان کا جھنڈا لہرارہا ہے ۔2013میں دہشت گرد چڑھائی پر تھے اور ریاست حصار میں تھی ۔آج ریاست چڑھائی پر ہے اور دہشت گرد حصار میں ہیں ۔یہ سب حکومت ،فوج ، سیاسی جماعتوں اور عوام کی مشترکہ کوششوں کی وجہ سے ممکن ہوا ہے ۔

ماضی میں بھی آپریشن کیے گئے لیکن آج آپریشن سے دہشت گردوں کی کمر ٹوٹ چکی ہے ۔2013میں ملکی زر مبادلہ کے ذخائر 6ارب ڈالر تھے جو اب 20ارب ڈالر ہوگئے ہیں ۔کراچی اسٹاک ایکس چینج بلندیوں کی سطح کو چھورہا ہے ۔ہمیں جو مسائل ورثے میں ملے ہیں وہ گہرے اور پیچیدہ ہیں ۔ڈھائی سال میں ایک سال تو دھرنے کی نظر ہوگیا ڈیڑھ سال میں جو ترقی کی ہے وہ عوام کے سامنے ہے ۔

انہوں نے کہا کہ چین نے پاکستان میں اربوں ڈالر کی سرمایہ کاری کی ہے ۔پوری دنیا کی نظریں اس منصوبے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

12/11/2015 - 23:14:34 :وقت اشاعت

:متعلقہ عنوان