لاش کی غلط شناخت۔ آخری رسومات منسوخ کر دی گئیں
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات نومبر

لاش کی غلط شناخت۔ آخری رسومات منسوخ کر دی گئیں

شگاگو(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔12نومبر۔2015)74 سال کی عمر میں الزائیمر سے مرنے والی ایلا روٹلیج کو شکاگو میں 7 نومبر کو دفن کیا جاناتھا تاہم جب اس کی بیٹی مونیک ولیمز نے اپنی ماں کا چہرہ آخری دفعہ دیکھنا چاہا تو پتہ چلا کہ تابوت میں اس کی ماں نہیں کوئی اور عورت ہے۔مونیک ولیمز نے شکاگو ٹریبون کو بتایا کہ جب ہم نے لاش کو دیکھا تو وہ ہمیں ہماری ماں نہ لگی۔

پھر غور سے دیکھا تو پتہ چلا کہ یہ کہیں سے بھی ہماری ماں نہیں لگتی۔ مونیک ولیمز کے شبہات درست نکلے ۔ لاش کے سر سے بالوں کی وگ ہٹائی گئی تو اس کے سر کے بال سیاہ تھے جبکہ مونیک کی ماں کے بال سفید تھے۔ لاشوں کی تبدیلی کی تصدیق ہونے کے بعد آخری

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

اس خبر کا حوالہ
12/11/2015 - 23:07:18 :وقت اشاعت