کعبہ کس منہ سے جاؤ گے غالب ۔۔۔ شرم تم کو مگر نہیں آتی
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 12/11/2015 - 21:25:37 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 21:25:34 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 21:13:31 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 21:13:30 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 21:13:30 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 21:12:19 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 21:12:19 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 21:01:55 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 21:01:55 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 21:00:10 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 21:00:10
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

کعبہ کس منہ سے جاؤ گے غالب ۔۔۔ شرم تم کو مگر نہیں آتی

مجھ کو کہہ رہے ہیں ،اسپیکر ۔۔۔۔اپنے آپ کو کہہ رہا ہوں ،میاں رفیق

لاہور( اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔12 نومبر۔2015ء)پنجاب اسمبلی کے ایوان میں اسپیکر رانا محمد اقبال اور بزرگ حکومتی رکن میاں محمد رفیق کے درمیان دلچسپ مکالمے سے ایوان کشت زعفران بن گیا ۔ اجلاس کے آغاز پر میاں محمد رفیق شعر سنانے کے لئے اسپیکر سے اجازت طلب کرتے رہے تاہم انہیں اس کی اجازت نہ ملی ۔ وقفہ سوالات کے دوران میاں محمد رفیق ضمنی سوال کرنے کے لئے ایوان میں کھڑے ہوئے تو پیپلز پارٹی کی خاتون رکن فائزہ ملک سمیت دیگر نے کہا کہ شعر تو رہ ہی گیا ۔

جس پر میاں محمد رفیق نے کہا کہ شعر سناؤ یا ضمنی سوال کروں جس پر اراکین نے شعر سنانے کا مطالبہ کیا ۔ میاں محمد رفیق نے کہا کہ شعر سنانے کا موقع تو نکل گیا ہے لیکن میں پھر بھی سنا دیتا ہوں ۔ انہوں نے ایوان میں مرزاغالب کا شعر سناتے ہوئے کہا کہ کعبہ کس منہ سے جاؤ گے غالب ۔۔۔شرم تم کو مگر آتی نہیں ۔ جس پر اسپیکر نے کہا کہ کس کو کہہ رہے ہیں ۔ مجھ کو کہہ رہے ہیں ۔جس پر ایوان میں قہقے بلند ہوئے ۔میاں محمد رفیق نے فوراً اور دوتین مرتبہ دوہرایا کہ نہیں میں اپنے آپ کو کہہ رہا ہوں جس پر دوبارہ ایوان میں قہقے بلند ہوئے ۔

12/11/2015 - 21:12:19 :وقت اشاعت