سپریم کورٹ نے وزیراعظم توہین عدالت کیس میں کورٹ مارشل کے باوجود شجاعت عظیم کو ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 12/11/2015 - 19:50:01 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 19:46:21 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 19:46:21 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 19:46:21 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 19:42:55 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 19:42:55 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 19:42:55 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 19:41:18 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 19:41:17 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 19:41:17 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 19:39:31
پچھلی خبریں - مزید خبریں

اسلام آباد

اسلام آباد شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:14 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:15 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:18 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:58:19 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:59:54 وقت اشاعت: 18/01/2017 - 10:59:56 اسلام آباد کی مزید خبریں

سپریم کورٹ نے وزیراعظم توہین عدالت کیس میں کورٹ مارشل کے باوجود شجاعت عظیم کو مشیر ہوا بازی مقرر کئے جانے پر وفاقی حکومت سے وضاحت مانگ لی

حکومت چھپن چھپائی کا کھیل نہ کھیلے، اگر حکومت نے دفاع کرنا ہے تو پھر اس کے نتائج بھی سوچ لے، کسی کو بھی غیر آئینی و غیر قانونی کاموں کی اجازت نہیں دیں گے؛ جسٹس امیر ہانی مسلم کے ریمارکس

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔12 نومبر۔2015ء) سپریم کورٹ نے وزیراعظم توہین عدالت کیس میں کورٹ مارشل کے باوجود شجاعت عظیم کو مشیر ہوا بازی مقرر کئے جانے پر وفاقی حکومت سے 2 دسمبر تک وضاحت مانگ لی۔ عدالت نے ڈپٹی اٹارنی جنرل کو ہدایت کی ہے کہ حکومت سے پتہ کر کے بتایا جائے کہ حکومت اس فیصلے پر نظرثانی یا اس کا دفاع کرے گی۔ جبکہ غلط بیانی کرنے اور سمری میں شجاعت عظیم کے حوالے سے کورٹ مارشل کا تذکرہ نہ کرنے پر سیکرٹری سول ایوی ایشن اتھارٹی نے سپریم کورٹ سے معافی مانگ لی ہے۔

3 رکنی بنچ کے سربراہ جسٹس امیر ہانی مسلم نے کہا ہے کہ حکومت چھپن چھپائی کا کھیل نہ کھیلے۔ حقائق چھپانے بارے حکومت بتائے کہ اس نے اس پر نظرثانی کرتا ہے یا پھر اس کا دفاع کرتا ہے اگر حکومت نے دفاع کرنا ہے تو پھر اس کے نتائج بھی سوچ لے۔ کسی کو بھی غیر آئینی و غیر قانونی کاموں کی اجازت نہیں دیں گے۔ ایسا کب تک چلے گا۔ ایک شخص کا کورٹ مارشل ہوا اور اسی کو عہدوں سے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

12/11/2015 - 19:42:55 :وقت اشاعت