براہمداغ بگٹی کی بات چیت پر رضامندی کا خیر مقدم، حکومت اور ریاست پاکستان نے کبھی ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
جمعرات نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 12/11/2015 - 13:37:04 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 13:32:15 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 13:32:14 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 13:29:26 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 13:28:23 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 13:21:01 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 13:08:14 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 13:08:14 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 12:48:01 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 12:46:52 وقت اشاعت: 12/11/2015 - 12:46:52
پچھلی خبریں - مزید خبریں

کوئٹہ

کوئٹہ شہر میں شائع کردہ مزید خبریں

وقت اشاعت: 21/01/2017 - 00:00:15 وقت اشاعت: 21/01/2017 - 00:00:16 وقت اشاعت: 20/01/2017 - 16:30:47 وقت اشاعت: 20/01/2017 - 16:30:57 وقت اشاعت: 20/01/2017 - 16:54:19 وقت اشاعت: 20/01/2017 - 17:17:03 کوئٹہ کی مزید خبریں

براہمداغ بگٹی کی بات چیت پر رضامندی کا خیر مقدم، حکومت اور ریاست پاکستان نے کبھی بات چیت سے انکار نہیں کیا، سرفراز بگٹی

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔12 نومبر۔2015ء)بلوچستان کے صوبائی وزیر داخلہ سرفراز بگٹی نے ناراض قوم پرست بلوچ رہنما براہمداغ بگٹی کی طرف سے بات چیت پر رضامندی کا خیر مقدم کیا ہے۔غیرملکی میڈیا سے خصوصی گفتگو میں سرفراز بگٹی نے کہا کہ حکومت اور ریاست پاکستان نے کبھی بات چیت سے انکار نہیں کیا، وزیراعظم پاکستان نے ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ کو بلوچستان میں امن کے لیے مذاکرات شروع کرنے کا کام سونپا ہے اور انہیں مذاکرات کا پورا اختیار حاصل ہے۔

برطانوی نشریاتی ادارے کودیے گئے ایک انٹرویو میں براہمداغ بگٹی نے کہا تھا کہ بلوچستان میں امن کے لیے مذاکرات پر اْن کی رائے جاننے کے لیے بلوچستان کے وزیراعلیٰ عبد المالک بلوچ اور وفاقی وزیر برائے سرحدی امور عبدالقادر بلوچ نے جنیوا میں اْن سے ملاقات کی تھی۔انہوں نے کہا تھا کہ بلوچستان کے مسئلے پر وہ بات کرنے کو تیار ہیں

لیکن براہمداغ بگٹی کے بقول بلوچ رہنماوٴں سے مذاکرات کے لیے بلوچستان کے وزیر اعلیٰ کے پاس کوئی اختیار نہیں ہے۔

سرفراز بگٹی نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان نے ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ کو بلوچستان میں امن کے لیے مذاکرات شروع کرنے

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

12/11/2015 - 13:21:01 :وقت اشاعت