زلزلہ متاثرین سردی کے موسم میں کھلے آسمان تلے زندگی گزارنے پر مجبور ہیں‘ خشک راشن،خیمے،دودھ،ادویات ..
بند کریں
تازہ ترین ایڈ یشن کے لیے ابھی کلک کریں
بدھ نومبر

مزید اہم خبریں

وقت اشاعت: 11/11/2015 - 19:22:08 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 19:22:01 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 19:22:01 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 19:22:01 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 19:20:30 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 19:20:30 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 19:19:29 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 19:19:29 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 19:19:29 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 19:18:19 وقت اشاعت: 11/11/2015 - 19:18:19
پچھلی خبریں - مزید خبریں

لاہور

زلزلہ متاثرین سردی کے موسم میں کھلے آسمان تلے زندگی گزارنے پر مجبور ہیں‘ خشک راشن،خیمے،دودھ،ادویات اور صاف پینے کاپانی بڑی مقدارمیں چاہئے‘پاکستان کے عوام دل کھول کر اپنے ہم وطنوں کی مددکریں

امیر جماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمدکا بیان

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔11 نومبر۔2015ء) امیرجماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمدنے موسم کی تبدیلی کے ساتھ ہی زلزلہ متاثرین کی مشکلات میں اضافے پر تشویش کااظہارکرتے ہوئے کہاہے کہ حکومت کی جانب سے زلزلہ متاثرین کے لئے کی جانے والی امداد ناکافی ہے۔مالاکنڈ اور فاٹا میں80ہزار مکانات منہدم ہوئے ہیں جبکہ ہلاکتوں کی صحیح تعداد بھی حکومتی اعدادوشمار سے زائد ہے۔

موسم سرماکے ساتھ ہی کھلے آسمان تلے زندگی گزرنے والے متاثرین کی کسی قسم کی کوئی امداد نہیں کی جارہی۔چترال اور مالاکنڈ کے بہت سے علاقے ایسے ہیں جہاں ابھی تک امداد نہیں پہنچ سکی۔انہوں نے کہاکہ حکومت کی جانب سے مکانات کی دوبارہ تعمیر کے لئے صرف دولاکھ روپے فی کس دینا درحقیقت اونٹ کے منہ میں زیرہ کے مترادف ہے۔منہدم مکانات کی دوبارہ تعمیر کے لئے امدد کم از کم پانچ لاکھ روپے فی کس اداکی جائے۔

فاٹامیں پہلے ہی کاروبار کے مواقع بہت کم ہیں۔وفاقی وصوبائی حکومتیں خصوصی پیکج کااعلان کریں تاکہ زلزلہ

اس خبر کی تفصیل پڑھنے کیلئے یہاں پر کلک کیجئے

11/11/2015 - 19:20:30 :وقت اشاعت